تحریک انصاف کا اسمبلیوں میں واپسی کا اعلان

اپ ڈیٹ 05 اپريل 2015
—

پاکستان تحریک انصاف کی سینٹرل ایگزیکٹو کمیٹی (سی ای سی) نے قومی و صوبائی اسمبلیوں سے سات ماہ سے جاری پارلیمنٹ کا بائیکاٹ ختم کرنے کا اعلان کرتے ہوئے پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس میں شرکت کا اعلان کیا ہے ۔

پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان نے سی ای سی کے اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ جوڈیشل کمیشن کے قیام کے بعد تحریک انصاف نے پارلیمنٹ میں واپسی کا فیصلہ کرنا تھا اور وہ کل سے شروع ہونے والے پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس میں شرکت کریں گے۔

انہوں نے کہا کہ وہ کل یمن تنازع کے حوالے سے اپنی جماعت کا مؤقف پیش کریں گے۔

عمران خان نے اس موقع پر کراچی میں حلقہ این اے 246 کے ضمنی انتخابات کی مہم کے دوران پیش آنے والے واقعات کی وجہ سے متحدہ قومی موومنٹ پر بھی شدید نتقید کی۔

عمران خان نے کراچی کے علاقے عزیز آباد میں پی ٹی آئی کے انتخابی کیمپ پر حملے کو ایم کیو ایم کی دہشت گردی قرار دیا اور کہا کہ اگر ان کے کسی کارکن کو کچھ ہوا تو وہ برطانیہ میں ایم کیو ایم کے قائد الطاف حسین کے خلاف مقدمہ درج کروائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ وہ کراچی کے دورے پر جا رہیں جس کے دوران وہ ہر اس جگہ جائیں گے جہاں عمران اسماعیل ان کو لے کر جائیں گے۔

پاکستان تحریک انصاف کے ممبر قومی اسمبلی ڈاکٹر اظہر جدون نے ڈان ڈاٹ کام کو بتایا کہ سی ای سی نے اتفاق رائے سے یہ فیصلہ کیا کہ پارلیمنٹ کو واپس جایا جائے۔

جدون کے مطابق تحریک انصاف کے زیادہ تر اراکین اسمبلی اس بات کے حق میں تھے کہ پارلیمنٹ میں واپس جانا چاہیے۔

ضرور پڑھیں

تبصرے (3) بند ہیں

ارشد اقبال Apr 05, 2015 07:06pm
کفر ٹوٹوا خداخدا کرکے۔۔۔۔ چودھری اعتزاز احسن سے کون واقف نہیں،وکالت کیساتھ ساتھ وہ شعر و شاعری بھی خوب کرتے ہیں۔گزشتہ سال جب اسلام آباد دھرنوں کے نرغے میں تھا تو پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس میں اعتزاز احسن کی تقریر آج بھی سب کو یاد ہوگی،اس سے قبل اپوزیشن جماعتوں کے بار بار اصرار پر جب وزیراعظم سینیٹ اجلاس میں شریک ہوئے تو اعتزاز احنس نے برملا کہا تھا ۔۔ لائے اس بت کو التجا کرکے کفر ٹوٹا خداخدا کرکے اب جب عمران خان نے اسمبلی میں واپس جانے کا فیصلہ کر ہی لیا تو یہ کیا یہ پوچھا جا سکتا ہے کہ ! کیا انتخابی دھاندلی کی تحقیقات سے متعلق جوڈیشل کمیشن کا فیصلہ آگیا؟ کیا اب ایوان زیریں یعنی قومی اسمبلی جعلی نہیں ہوگی ؟ کیا واقعی اب اسمبلی جاکر پی ٹی آئی جمہوری رویہ اپنا پائے گی؟ اگر جوڈیشل کمیشن نے دھاندلی نہ ہونے کی رپورٹ دی تو پھر خان صاحب کیا کریں گے؟ اگر یہ سب ہی کرنا تھا تو پھر 13 اگست 2014کی شام جب وزیراعظم نے جوڈیشل کمیشن کیلئے پی ٹی آئی کا مطالبہ تسلیم کرلیا تو عمران خان کیوں نہ مانے؟
Khuram Murad Apr 05, 2015 07:13pm
اب وہ لوگ کہاں ہیں جو عمران خان کو جمہورئیت کے خلاف سازش کہتے تھے۔ سب سے بڑھ کر جاوید داغی کہاں ہے جو جمہورئیت کا چیمپئن بنا پھرتا تھا۔ سچی بات تو یہ ہے کہ عمران خان اکیلا ہے اور دوسری طرف سب سیاسی سوداگر اور سازشی ہیں۔ جمہورئیت کے استحکام کے لئے ایسا اقدام صرف سچا پاکستانی ہی کر سکتا ہے۔
Israr Muhammad Khan Yousafzai Apr 05, 2015 08:49pm
پارلیمنٹ میں انے کا فیصلہ خوش آئند ھے لیکن لوگ حان سے یہ پوچھنے میں حق بجانب ھونگے کہوہ پرانی اسمبلی پرانے وزیراعظم پرانے پاکستان پرانے الیکشن کمیشن میں کیوں واپس آگئے انہوں نے دھاندلی کے بتی کے پیچھے کیوں لگایا تھا جب سارے فیصلے تم نے بات چیت کے ذریعہ کرنے تھے تو احتجاج کی کیا ضرورت تھی