ہندوستان نے چین کو سی پیک پر خدشات سے آگاہ کردیا

14 اگست 2016

ای میل

نئی دہلی: ہندوستان نے چین کے ساتھ جیش محمد کے سربراہ مسعود اظہر پر اقوام متحدہ کی جانب سے پابندی اور ہندوستانی کی نیوکلیئر سپلائرز گروپ(این ایس جی) میں شمولیت کی مخالفت کا معاملہ اٹھایا اور اپنے تحفظات کا اظہار کیا۔

پریس ٹرسٹ آف انڈیا کے مطابق وزیر برائے امور خارجہ سشما سوراج نے چینی وزیر خارجہ وانگ ای سے ملاقات کی دونوں ممالک کے درمیان تعلقات کو بہتر بنانے کیلئے سیکریٹری خارجہ کی سطح پر مذاکرات کے حوالے سے نئے مکینزم پر اتفاق کیا گیا۔

یہ بھی پڑھیں:سی پیک مخالف تمام سرگرمیوں سے واقف ہیں: آرمی چیف

یہ ملاقات ایک ایسے وقت میں ہوئی ہے جب یہ اطلاعات سامنے آئی ہیں کہ ہندوستانی وزیر دفاع منوہر پارریکر رواں ماہ واشنگٹن کا دورہ کریں گے اور یہ آٹھ ماہ کے دوران ان کا دوسرا دورہ امریکا ہوگا۔

ملاقات میں سشما سوراج نے پاک چین اقتصادی راہداری پر ہندوستان کے خدشات سے بھی چینی وزیر خارجہ کو آگاہ کیا اور دونوں رہنمائوں کے درمیان تین گھنٹے طویل ملاقات میں کشمیر کا مسئلہ بھی زیر بحث آیا۔

مزید پڑھیں: این ایس جی میں شمولیت: ہندوستان کا سب سے بڑا مخالف چین

دونوں رہنمائوں نے سرحد کی صورتحال کا بھی جائزہ لیا اور امن و استحکام کو مزید مستحکم بنانے کیلئے اقدامات پر تبادلہ خیال کیا۔

رپورٹس کے مطابق ہندوستانی وزیر دفاع کے دورہ امریکا کا اہم مقصد لاجسٹکس ایکسچینج میمورینڈم آف ایگریمنٹ پر دستخط کے حوالے سے کوشش کرنا ہے۔

واضح رہے کہ امریکا اور ہندوستان نے اپریل 2016 میں اعلان کیا تھا کہ جلد ہی لاجسٹک سپورٹ معاہدے کو حتمی شکل دے دی جائے گی۔

یہ خبر 14 اگست 2016 کو ڈان اخبار میں شائع ہوئی