— رائٹرز فائل فوٹو
— رائٹرز فائل فوٹو

فیس بک نے گزشتہ سال سب سے بڑی تبدیلی اپنے لائیک بٹن ری ایکشنز کے ذریعے کی تھی اور اس برس وہ انسٹاگرام اور میسنجر کو اپنی ایپ کے ساتھ ملانے والی ہے۔

جی ہاں فیس بک نے ایک نئے فیچر کی آزمائش شروع کردی ہے جس میں وہ اپنی تمام ایپس کو اکٹھا کرنے کا تجربہ کررہی ہے۔

ٹیک کرنچ نے اس فیچر کو سب سے پہلے دیکھا جو کہ آئی او ایس ڈیوائسز استعمال کرنے والے صارفین کی محدود تعداد کو دستیاب ہے جس میں فیس بک کی تمام ایپس یعنی فیس بک، میسنجر اور انسٹاگرام کو ایک جگہ اکٹھا کیا جارہا ہے۔

یہ بیشتر سوشل میڈیا صارفین کے لیے اچھا اقدام ہے جو انہیں فوری طور پر مختلف ایپس میں اپنی پروفائلز میں فوری رسائی کا موقع دے گا اور ہر بار نوٹیفکیشن ملنے پر الگ الگ ایپس کھولنے کی ضرورت نہیں ہوگی۔

مزید پڑھیں : فیس بک ری ایکشنز اب کمنٹس میں بھی دستیاب

اس فیچر میں اوپر دائیں جانب آپ کی پروفائل تصویر پر کلک کرنے پر آپ تمام ایپس کے نوٹیفکیشن دیکھ سکیں گے، جیسا آپ نیچے تصاویر میں دیکھ سکتے ہیں۔

اسکرین شاٹ
اسکرین شاٹ

جب آپ نوٹیفکیشن پر کلک کریں گے تو ایک نیا مینیو کھلے گا جس میں انسٹا گرام، میسنجر اور فیس بک نوٹیفکیشنز الگ الگ پروفائل امیجز کے ساتھ نظر آئیں گے جن پر کلک کرکے آپ کسی بھی ایپ پر جاسکیں گے۔

اسکرین شاٹ
اسکرین شاٹ

فیس بک ترجمان نے بھی اس کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا ' ہم چھوٹے پیمانے پر ایک تجربہ کررہے ہیں جس کے ذریعے صارفین کے لیے اپنی ایپس کے نوٹیفکیشنز دیکھنا اور لوگوں سے رابطے کرنا آسان ہوجائے گا، ہم ایسے ذرائع کی جانچ کررہے ہیں جن سے لوگوں کے لیے فیس بک، میسنجر اور انسٹاگرام اکاﺅنٹس کے درمیان سوئچ کرنا آسان ہوجائے'۔

یہ بھی پڑھیں : فیس بک اشتہارات سے نجات کیسے ممکن؟

اور فیس بک کا تو یہی سادہ سا خیال ہے کہ صارفین کو زیادہ سے زیادہ وقت اپنی ایپس پر گزارنے پر مجبور کیا جائے، وہ جتنا لوگوں سے رابطے میں رہیں گے، اتنے ہی زیادہ اشتہارات بھی ملیں گے۔