تقی احمد فلم میں مرکزی کردار کرتے نظر آئیں گے—پرومو فوٹو
تقی احمد فلم میں مرکزی کردار کرتے نظر آئیں گے—پرومو فوٹو

آنے والی پاکستانی فلم ’عارفہ‘ کے مرکزی اداکار تقی احمد شوٹنگ کے دوران ایک اسٹنٹ کرتے ہوئے زخمی ہوگئے، تاہم طبی امداد کے بعد ان کی حالت بہتر ہوگئی۔

ٹی وی اداکار تقی احمد ان دنوں اپنے والی فلم ’عارفہ‘ دی فلم کی شوٹنگ میں مصروف ہیں، فلم کی کہانی صوبہ سندھ کے دارالحکومت کراچی میں ہونے والے والے ایک سچے واقعے پر مبنی ہے۔

’عارفہ‘ کی کہانی 1986 میں کراچی کی قصبہ کالونی میں ہونے والے کسی سچے واقعے سے متاثر ہوکر لکھی گئی ہے، تاہم فلم کی ٹیم کا دعویٰ ہے کہ کہانی مکمل طور پر فکشن ہے۔

اداکار لکڑی کی میز سے جاٹکرائے، جس وجہ سے ان کا کافی خون بہا—فوٹو: فیس بک
اداکار لکڑی کی میز سے جاٹکرائے، جس وجہ سے ان کا کافی خون بہا—فوٹو: فیس بک

فلم کی ٹیم کے مطابق کہانی سچے واقعے سے متاثر ہے، مگر کہانی رومانس اور کامیڈی کے اردگرد گھومتی ہے، تاہم فلم میں تھرلر مناظر بھی ہیں۔

ڈائریکٹر ابو علیحہ کی فلم کو وہ خود اور توصیف احمد پروڈیوس کر رہے ہیں، کم بجٹ والی اس فلم کی زیادہ تر ٹیم نئے افراد پر مشتمل ہے۔

فلم میں ’عارفہ‘ کا کردار سکینا خان ادا کرتی نظر آئیں گی، جب کہ تقی احمد فلم میں ’صولت‘ کے کردار میں نظر آئیں گے۔

فلم کی دیگر کاسٹ میں اداکارہ متھیرا، شارق محمود اور اکبر سبحانی شامل ہیں، متھیرا اور شارق محمود فلم میں منفی کرداروں میں نظر آئیں گے۔

سکینا خان عارفہ کے کردار میں نظر آئیں گی—پرومو فوٹو
سکینا خان عارفہ کے کردار میں نظر آئیں گی—پرومو فوٹو

تقی احمد فلم کی شوٹنگ میں مصروف تھے کہ وہ لکڑی کی ٹیبل سے ٹکرا گئے، جو ان کے پیٹ میں لگی، جس وجہ سے انہیں زخم آئے، اور ان کے کپڑے خون آلود ہوگئے۔

تقی احمد کے خون آلود کپڑوں کی تصاویر سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئیں، تاہم چند گھنٹوں بعد تقی احمد نے اپنے فیس بک اکاؤنٹ پر ایک ویڈیو پوسٹ کی، جس میں انہوں نے اپنی خیریت سے متعلق آگاہ کیا۔

انہوں نے بتایا کہ انہیں بہت زیادہ زخم نہیں آئے، تاہم چوٹ لگنے کی وجہ سے ان کا خون کافی نکلا، جس وجہ سے انہیں درد بھی ہوا، تاہم اب وہ بلکل ٹھیک ہیں۔

خیال رہے کہ ’عارفہ‘ کی ریلیز کی تاریخ کا اعلان نہیں کیا گیا، تاہم امکان ہے کہ اسے 2018 کی پہلی سہ ماہی میں سینما گھروں کی زینت بنایا جائے گا۔

فلم کو آئندہ برس ریلیز کیے جانے کا امکان ہے—پرومو فوٹو
فلم کو آئندہ برس ریلیز کیے جانے کا امکان ہے—پرومو فوٹو