کراچی : اسٹیٹ بینک آف پاکستان (ایس بی پی) نے بیرون ملک سے ترسیلاتِ زر کی آسان وصولی کو یقینی بنانے کے لیے ’ آسان ریمی ٹنس اکاؤنٹ‘ کا آغاز کردیا جس کے تحت بینکنگ کی سہولت سے محروم یا نیم محروم طبقے کو بہترخدمات پیش کی جا سکیں گی۔

مرکزی بینک کا کہنا ہے کہ اس سہولت کا آغاز پاکستان ریمی ٹینس اِنیشیئٹیو (پی آر آئی) کے تعاون سے کیا گیا ہے جس کا بینادی مقصد ترسیلاتِ زر کی وصولی کو بینک اکائونٹ کے ذریعے ممکن بنانا اور کاؤنٹر پر کیش لینے کا پرانہ طریقہ ختم کرنا ہے۔

اسٹیٹ بینک کے اعلامیے کے مطابق آسان ریمٹینس اکاؤنٹ میں رقم کی حد 20 لاکھ روپے ہوگی جبکہ اس اکاؤنٹ سے یومیہ 50 ہزار روپے نکالے جاسکیں گے۔

یہ پڑھیں : اے ٹی ایم اسکیمنگ کے ذریعے ایک کروڑ کی چوری: اسٹیٹ بینک جاگ اٹھا

اعلامیے کے مطابق آسان ریمٹینس اکاؤنٹ سے یومیہ فنڈ ٹرانفسر کی حد بھی 50 ہزار روہے مقرر کی گئی ہے اور ترسیلات زر کے وصول کنندگان اور اہل خانہ مذکورہ اکاؤنٹ کھلوا سکتے ہیں۔

اسٹیٹ بینک کی جانب سے جاری ہدایت نامے کے مطابق آسان ریمی ٹینس اکاؤنٹ کے لیے ترسیلات زر وصول کرنے والا شخص انٹرنیشنل بینک اکاؤنٹ نمبر (آئی بی اے این) اور ترسیلاتِ زر بھیجنے والے کی مکمل معلومات فراہم کرنے کا پابند ہوگا۔

مزید پڑھیں : اسٹیٹ بینک نے بینک آف چائنا کو کاروبار کی اجازت دے دی

اسٹیٹ بینک کے اعلامیے کے مطابق ایک صفحے پر مشتمل فارم پر بنیادی معلومات فراہم کرکے یہ اکاؤنٹ کھلوایا جا سکتا ہے اور اس مقصد کے لیے الیکڑونک فارم کی سہولت بھی موجود ہوگی۔

اسٹیٹ بینک نے امید ظاہر کی کہ مذکورہ اقدام سے حکومتی حکمت عملی کے تحت مقرر کردہ اہداف کا حصول ممکن ہو جائے گا۔


یہ خبر ڈان اخبار میں 7 دسمبر 2017 کو شائع ہوئی