محمد شہزاد کو 58 ون ڈے اور اتنے ہی ٹی20 میچوں میں افغانستان کی نمائندگی کا اعزاز حاصل ہے— فوٹو: اے ایف پی
محمد شہزاد کو 58 ون ڈے اور اتنے ہی ٹی20 میچوں میں افغانستان کی نمائندگی کا اعزاز حاصل ہے— فوٹو: اے ایف پی

دبئی: انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) نے اینٹی ڈوپنگ قوانین کی خلاف ورزی کرنے پر افغانستان کے وکٹ کیپر بلے باز محمد شہزاد پر ایک سال کی پابندی عائد کر دی ہے۔

رواں برس شہزاد کا ڈوپ ٹیسٹ مثبت آیا تھا، ان کے نمونوں میں ممنوعہ ادویات پائی گئی تھیں، شہزاد وزن کم کرنے کیلئے دوا استعمال کر رہے تھے جس کے باعث ان کا ڈوپ ٹیسٹ مثبت آیا تھا۔

آئی سی سی نے 26 اپریل کو انہیں عبوری طور پر معطل کر دیا تھا اور 28 جون کو شہزاد نے خود بھی اپنے جرم کا اعتراف کیا تھا۔

جمعرات کو آئی سی سی کی طرف سے جاری کردہ بیان کے مطابق شہزاد آئی سی سی اینٹی ڈوپنگ قوانین کی خلاف ورزی کے مرتکب ٹھہرے ہیں اور انہوں نے خود بھی قوانین کی خلاف ورزی کو تسلیم کیا اس لیے ان پر ایک سال کی پابندی عائد کی گئی ہے۔

پابندی کا اطلاق 17 جنوری 2017 سے 17 جنوری 2018 تک ہے اور شہزاد نے جنوری سے مارچ کے دوران جتنے بھی میچز کھیلے انہیں ان کے ریکارڈز سے نکال دیا گیا ہے۔