پاک بحریہ اور سعودی بحریہ کی اسپیشل آپریشن فورسز کے درمیان کراچی میں ہونے والی مشترکہ بحری مشق افعیٰ الساحل کا پہلا مرحلہ اختتام پذیر ہو گیا۔

پاک بحریہ کی جانب سے جاری اعلامیے کے مطابق مشق کے پہلے مرحلے کے دوران زمینی اور ہاربر سرگرمیوں کی مشق کے علاوہ بحری اسپیشل آپریشنز کی قبل از مشق ریہرسل بھی کی گئی۔

مشق افعیٰ الساحل کا مقصد دونوں بحری افواج کے مابین مشترکہ آپریشنز اور دفاعی صلاحیتوں کو فروغ دینا اور انسانی اسمگلنگ، بحری قذاقی اور دہشت گردی جیسے کئی میری ٹائم خطرات سے نمٹنا تھا تاکہ ان مشقوں سے دونوں ملکوں کو درپیش روایتی خطرات کے خلاف صلاحیت کو مشترکہ طور پر بہتر بنانے میں مدد ملے گی۔

خیال رہے کہ بحری مشق افعیٰ الساحل پاک بحریہ اور رائل سعودی نیول فورسز کی اسپیشل آپریشن فورسز کی باہمی مشق ہے جو سال 2011 سے باقاعدگی سے منعقد کی جارہی ہے۔

پاک بحریہ کے اعلامیے کے مطابق مشق کے سی فیز کے بعد میری ٹائم اسپیشل آپریشنز کا بھی انعقاد کیا جائے گا۔

اعلامیے میں مزید کہا گیا ہے کہ کراچی میں جاری بحری مشق افعیٰ الساحل کے ساتھ ساتھ پاک بحریہ اور سعودی بحریہ کی میرینز فورسز کے درمیان سعودی عرب میں دیرہ الساحل کے نام سے بھی بحری مشقیں جاری ہیں۔

دونوں برادر ممالک کی فورسز کے درمیان پیشہ ورانہ مہارتوں اور صلاحیتوں بالخصوص ساحلی دفاع، ملٹری آپریشنز اور اربن ٹیرین کا مظاہرہ، لینڈنگ کرافٹ یوٹیلٹی سے ساحل پر لینڈنگ اور کیموفلاج اور کنسیلمنٹ تیکنیک سے اسنائپرز کی تربیت ان مشقوں کا حصہ ہیں۔