گزشتہ چند روز کے دوران سوشل میڈیا پر پی آئی اے کی پرواز کی ایک ویڈیو وائرل ہوئی جس میں ایک ماں اپنے نومولود کے لیے ٹرپ رہی تھی۔

اس ویڈیو کے وائرل ہونے کے بعد زیادہ تر صارفین نے پی آئی اے کی ناقص سروس پر برہمی کا اظہار کیا جبکہ کچھ لوگ ایسے بھی تھے جنہوں نے تڑپتی ہوئی ماں کو ہی تنقید کا نشانہ بنا ڈالا۔

ویڈیو پر تبصرہ کرتے ہوئے لوگوں نے اس ماں کو ڈرامہ کوئین اور پاگل کہا جبکہ کچھ نے کہا کہ وہ ضرورت سے زیادہ چیخ رہی ہیں۔

ان کمنٹس پر سپر ماڈل نادیہ حسین نے اپنے غصے کا اظہار کرتے ہوئے ایک ویڈیو شیئر کی جس میں انہوں نے اس ماں پر تنقید کرنے والی خواتین کو بد دعا ہی دے دی۔

مزید پڑھیں: پی آئی اے طیارے کا اے سی بند ہونے سے نومولود بے ہوش

نادیہ حسین کا اپنی ویڈیو میں کہنا تھا کہ ’سوشل میڈیا پر اس ماں کے لیے سامنے آنے والے کمنٹس میں لوگ اسے پاگل، ڈرامہ کوئین کہہ رہے تھے، مجھے اتنا غصہ آرہا ہے کہ خواتین ایسے کمنٹس کررہی ہیں، خدا کرے کہ جن عورتوں نے ایسے کمنٹس کیے ہیں ان کے بچے بھی ایسے ہی گھٹ کر مر جائیں یا پھر خدا انہیں اولاد ہی نہ دے‘۔

انہوں نے پی آئی اے کو بھی تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ ’پی آئی اے کو اس کا جواب دینا ہوگا کہ کیوں دو گھنٹے تک اے سی بند رہا جس کے باعث لوگوں کا دم گھٹتا رہا‘۔

بعدازاں جہاں بہت سے صارفین نے نادیہ کا ساتھ دیا، وہیں کئی لوگ ماڈل پر بھی تنقید کرتے نظر آئے۔

ایک صارف نے کہا کہ نادیہ حسین خود ایک ماں ہوکر کسی دوسری ماں کے لیے ایسی بد دعا کیسے کرسکتی ہیں۔

جبکہ کسی نے کہا کہ کسی اور کی غلطی کی سزا کسی بچے کو نہیں دی جاسکتی۔

یہ بھی پڑھیں: نادیہ حسین کی بغیر میک اپ سیلفی پر صارفین کی تنقید

یاد رہے کہ باکمال لوگ لاجواب سروس کا دعویٰ کرنے والی پاکستان انٹرنیشل ایئرلائن ( پی آئی اے ) کے عملے کی غفلت سے فلائٹ میں آنے والا نومولود بے ہوش ہوگیا تھا۔

ڈان نیوز ٹی وی کے مطابق پیرس سے اسلام آباد آنے والی پی آئی اے کی پرواز پی کے 750 میں جہاز کا اے سی سسٹم بند ہونے سے گھٹن کے باعث ایک نومود کی حالت غیر ہوگئی تھے۔

سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی ویڈیو میں دیکھا جاسکتا تھا کہ اے سی سسٹم بند ہونے کے بعد مسافروں کی جانب سے عملے کو جہاز کا دروازہ کھولنے کا کہا جاتا رہا لیکن عملے نے دروازہ نہیں کھولا۔