’ایک فلم میں دو ہدایت کاروں کے ساتھ کام نہیں کرسکتا‘

ای میل

فوٹو/ اسکرین شاٹ
فوٹو/ اسکرین شاٹ

بولی وڈ کی جلد ریلیز ہونے والی فلم ‘منی کارنیکا: دی کوئین آف جھانسی’ کے اداکار سونو سود اور اداکارہ کنگنا رناوٹ کے درمیان جاری لفظی جنگ نے نیا موڑ اختیار کرلیا۔

کچھ دن قبل ہی 31 اگست کو یہ خبر سامنے آئی تھی کہ فلم کے مرکزی اداکار سونو سود نے کنگنا رناوٹ کے غلط رویے کی وجہ سے فلم سے علیحدگی اختیار کرلی، جس کے بعد یہ خبر بھی آئی ہے کہ اداکارہ نے فلم کی ڈائریکٹر شپ پر قبضہ کرتے ہوئے ہدایت کار کو بھی فلم سے الگ ہونے پر مجبور کردیا۔

فلم میں سداشوارو بھاؤ کا کردار ادا کرنے والے اداکار سونو سود نے کنگنا رناوٹ کے ساتھ ہونے والے تنازعات کے باعث فلم کو چھوڑ دیا تھا۔

مزید پڑھیں: کنگنا رناوٹ کے رویے سے تنگ آکر اداکار نے فلم چھوڑ دی؟

اس حوالے سے کنگنا کا کہنا تھا کہ بولی وڈ کے اداکار آج بھی ایسی فلم میں کام نہیں کرسکتے، جہاں ایک خاتون انہیں بتائے کہ وہ آگے کیا کریں گے۔

پہلے رپورٹس آئیں تھی کہ سونو نے فلم کو اس لیے چھوڑ دیا کیوں کہ اس کی ہدایات ایک خاتون دے رہی تھیں، جبکہ اب سونو سود نے خود بھی اس فلم کو چھوڑنے کی وجہ بتادی ہے۔

ہندوستان ٹائمز کو دیے انٹرویو میں سونو نے کہا کہ ’یہ میرا بیان نہیں تھا، میں نے ایسا کبھی نہیں کہا کہ میں ایک خاتون ہدایت کار کے ساتھ کام نہیں کرسکتا، میں اس سے قبل ایک ایسی فلم (ہیپی نیو ایئر) میں کام کرچکا ہوں جس کی ہدایات خاتون نے دی تھی، میں نے صرف یہ کہا تھا کہ میں ایک سیٹ پر دو ہدایت کاروں کے ساتھ کام نہیں کرسکتا، میں نے اپنے کیریئر میں 80 سے 90 فلمیں کی ہیں، اور ایک وقت میں ایک ہی ہدایت کار کے ساتھ کام کیا‘۔

یہ بھی پڑھیں: کنگنا پر ڈائریکٹر کے عہدے پر قبضے کا الزام

سونو نے کنگنا رناوٹ کو مشورہ دیا کہ وہ مسلسل وومن کارڈ کھیلنا بند کریں۔

خیال رہے کہ فلم ‘منی کارنیکا: دی کوئین آف جھانسی’ کی شوٹنگ سے ایک کلپ بورڈ کی تصویر سامنے آئی تھی، جس پر اداکارہ کا نام ہدایت کار کے خانے میں درج تھا۔

تصویر سوشل میڈیا پر وائرل ہونے کے بعد بھارتی میڈیا میں بھی یہ چہ مگوئیاں ہونے لگیں تھیں کہ کنگنا رناوٹ فلم ‘منی کارنیکا: دی کوئین آف جھانسی’ کی ہدایت کاری بھی کر رہی ہیں۔