امریکا: کالعدم تنظیم میں شمولیت کا 'خواہشمند' گرفتار

10 فروری 2019

ای میل

پراسیکیوٹر کے مطابق گرفتار شخص پاکستان سے تعلق رکھنے والی کالعدم تنظیم میں شمولیت کا خواہشمند تھا — فائل فوٹو/ اے پی
پراسیکیوٹر کے مطابق گرفتار شخص پاکستان سے تعلق رکھنے والی کالعدم تنظیم میں شمولیت کا خواہشمند تھا — فائل فوٹو/ اے پی

امریکی پولیس نے مبینہ طور پر پاکستان سے تعلق رکھنے والی کالعدم تنظیم میں شمولیت اختیار کرنے کے خواہشمند نیو یارک کے رہائشی کو گرفتار کرلیا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے ایسوسی ایٹڈ پریس (اے پی) کی رپورٹ کے مطابق امریکی اٹارنی جنرل جیوفرے برمین کا کہنا تھا کہ 29 سالہ جیسس والفریڈو کو گزشتہ ہفتے گرفتار کیا گیا تھا، جس وقت وہ کینڈی ایئرپورٹ سے فلائٹ کے ذریعے پاکستان روانہ ہونے والے تھے۔

مزید پڑھیں: شام: امریکی اور پاکستانی سمیت 'داعش' کے 5 غیر ملکی جنگجو گرفتار

ان کا کہنا تھا کہ جیسس والفریڈو لشکر طیبہ میں شمولیت اختیار کرنا چاہتے تھے، اس تنظیم پر ممبئی میں 2008 میں ہونے والے حملوں کا الزام ہے جس میں 168 افراد ہلاک ہوگئے تھے۔

پراسیکیوٹر نے بتایا کہ جیسس والفریڈو نے تنظیم میں شمولیت اختیار کرنے کے لیے آن لائن رابطے کی کوشش بھی کی۔

یہ بھی پڑھیں: امریکا: 5 گرفتار پاکستانیوں پر دہشت گردی کا الزام نہیں

انہوں نے بتایا کہ گرفتار شخص نے ایف بی آئی کے ایک خفیہ ایجنڈ کو بتایا کہ 'وہ اللہ کی راہ میں قتل کرنے اور ہلاک ہونے کے لیے تیار ہے'۔

جیسس والفریڈو پر غیر ملکی تنظیم کی حمایت سے متعلق لٹریچر فراہم کرنے کا الزام عائد کیا گیا ہے جبکہ یہ واضح نہیں ہوا ہے کہ انہیں الزامات کے خلاف اپنے حق کے لیے وکیل کرنے کی اجازت دی گئی ہے یا نہیں۔


یہ رپورٹ 10 فروری 2019 کو ڈان اخبار میں شائع ہوئی