'میری بیٹی سے شادی کرو اور کروڑوں روپے لے لو'

13 مارچ 2019

ای میل

ایک تھائی شخص نے یہ پیشکش کی— فوٹو بشکریہ ڈیلی میل
ایک تھائی شخص نے یہ پیشکش کی— فوٹو بشکریہ ڈیلی میل

تھائی لینڈ کے ایک کروڑ پتی شخص نے اپنی 26 سالہ بیٹی سے شادی کرنے والے شخص کو کروڑوں روپے اور اپنی جائیداد دینے کا اعلان کردیا۔

58 سالہ آرنون روڈتھونگ جنوبی تھائی صوبے Chumphon میں پھلوں کے فارم کے مالک ہیں اور اب انہوں نے اپنی بیٹی کارنیسٹا کے مستقبل کا فیصلہ خود کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

اپنی پیشکش میں آرنون روڈتھونگ نے بتایا کہ ان کی بیٹی خاندانی کاروبار چلانے میں ان کی مدد کرتی ہے، انگلش اور چینی زبان روانی سے بول سکتی ہے اور کنواری ہے۔

تھائی لینڈ کے مختلف حصوں میں عام طور پر لڑکوں کو اپنی مستقبل کی بیوی کو جہیز دینا ہوتا ہے مگر آرنون کے مطابق وہ ایسا نہیں کریں گے بلکہ مستقبل کے داماد کو ایک کروڑ تھائی بھات (لگ بھگ ساڑھے 4 کروڑ پاکستانی روپے) دیں گے جبکہ اپنا پھلتا پھولتا فارم بھی اس کے نام کردیں گے جس کی مالیت کروڑوں روپے ہے۔

اور ہاں کامیاب امیدوار کے لیے قومیت کی کوئی شرط نہیں بس اسے 'سخت محنت کرنے کے ساتھ کارنیسٹا کو خوش رکھنا ہوگا'۔

آرنون روڈتھونگ کے مطابق 'میں ایسے شخص کو چاہتا ہوں جو میرے کاروبار کا خیال رکھے اور اسے آگے بڑھائے، میں ایسا فرد نہیں چاہتا جس نے گریجویشن یا ماسٹر ڈغری لے رکھی ہو'۔

آرنون اور ان کی بیٹی — فوٹو بشکریہ ڈیلی میل
آرنون اور ان کی بیٹی — فوٹو بشکریہ ڈیلی میل

ان کے بقول 'میں ایک باوقار شخص چاہتا ہوں، کوئی ایسا جو محنت پر یقین رکھتا ہو اور بس'۔

ویسے تو ان کے کئی بیٹے ہیں جو روایتی طور پر خاندانی کاروبار کے وارث سمجھے جاتے ہیں مگر آرنون کے مطابق جیسے ہی ان کا داماد آئے گا تو وہ اپنے تمام اثاثے اس کے نام کردیں گے۔

ان کا فارم اس خطے کا سب سے بڑا فروٹ فارم ہے اور پورے خطے میں ان کی جائیدادیں پھیلی ہوئی ہیں۔

دلچسپ بات یہ ہے کہ ان کی بیٹی کو اپنے باپ کی اس پیشکش کا علم ایک دوست سے ہوا اور وہ اسے دیکھ کر حیران رہ گئیں۔

کارنیسٹا — فوٹو بشکریہ ڈیلی میل
کارنیسٹا — فوٹو بشکریہ ڈیلی میل

ان کا کہنا تھا 'یہ درست ہے میں کنواری ہوں، مگر جب میں کسی سے شادی کروں گی تو میری خواہش ہوگی وہ ایسا اچھا فرد ہو جو اپنے خاندان سے پیار کرے'۔