‘ریپ‘ الزامات کی وجہ سے بند کیا گیا نیشنل جیوگرافک کا پروگرام نشر کرنے کا اعلان

ای میل

نیشنل جیوگرافک نے  پروگرام نشر کرنے کی تصدیق کردی—فوٹو: این وائے ڈیلی نیوز
نیشنل جیوگرافک نے پروگرام نشر کرنے کی تصدیق کردی—فوٹو: این وائے ڈیلی نیوز

دسمبر 2018 میں معروف امریکی سائنسدان اور ڈسکوری چینل نیشنل جیوگرافک کے میزبان نیل ڈی گریس ٹائسن کے خلاف 2 خواتین نے جنسی طور پر ہراساں جب کہ ایک نے ریپ کا الزام عائد کیا تھا۔

ان پرالزام لگانے والی امریکی ریاست پنسلوانیا کی بک نیل یونیورسٹی کی ڈاکٹر کیٹالن نے الزام عائد کیا تھا کہ نیل ڈی گریس ٹائسن نے 2009 میں ایک تقریب کے دوران جنسی لذت لینے کے لیے انہیں نامناسب انداز میں چھوا۔

ان پرالزام لگانے والی دوسری خاتون ایشلے واٹسن نے دعویٰ کیا تھا کہ نیل ڈی گریس ان کے ساتھ نامناسب انداز اور رویے کے ساتھ پیش آتے تھے، جس وجہ سے انہوں نے ان کی اسسٹنٹ کی ملازمت چھوڑی۔

ساتھ ہی موسیقار اور گلوکار تاشیا امت نے الزام لگایا تھا کہ نیل ڈی گریس ٹائسن نے ان کا اس وقت ریپ کیا جب وہ 1980 میں گریجوئیشن کے شاگرد تھے۔

اگرچہ نیل ڈی گریس ٹائسن نے ان الزامات کو فیس بک پوسٹ کے ذریعے مسترد کیا تھا۔

تاہم معروف ڈسکوری چینل نیشنل جیوگرافک اور فاکس نیوز نے ان کے پروگرام کو بند کرکے ان کے خلاف تحقیقات کا آغاز کردیا تھا۔

نیل ڈی گریس متعدد سائنسی اداروں میں اعلیٰ عہدوں پر بھی فائز رہے—فوٹو: پیج سکس
نیل ڈی گریس متعدد سائنسی اداروں میں اعلیٰ عہدوں پر بھی فائز رہے—فوٹو: پیج سکس

اب اطلاعات سامنے آئی ہیں کہ نیشنل جیوگرافک نے نیل ڈی گریس ٹائسن کے خلاف تحقیقات مکمل کرلی ہے اور اب ان کا پروگرام نشر کیا جائے گا۔

شوبز ویب سائٹ ’ورائٹی‘ کے مطابق نیشنل جیوگرافک نے نیل ڈیگ ریس ٹائسن کے خلاف تفتیش مکمل کرتے ہوئے ان کے پروگرام کو آئندہ ماہ اپریل سے نشر کرنے کی تصدیق کردی۔

رپورٹ کے مطابق آئندہ ماہ اپریل سے نیشنل جیوگرافک ان کا پروگرام ’اسٹار ٹاک‘ کے پانچویں سیزن اور ’کاسموس‘ کے تیسرے سیزن کو نشر کیا جائے گا۔

یہ بھی پڑھیں: خواتین کو جنسی طور پر ہراساں کرنے کے الزامات کے بعد نیشنل جیوگرافک کا پروگرام بند

اگرچہ نیشنل جیوگرافک نے نیل ڈی گریس ٹائسن کے پروگرامات کو نشر کرنے کی تصدیق کی ہے، تاہم ادارے نے یہ واضح نہیں کیا کہ ان کے خلاف جاری تحقیقات کے نتائج کیا نکلے؟

نیل ڈی گریس پر پہلی مرتبہ الزامات لگے تھے—فائل فوٹو: ای ٹی کینیڈا
نیل ڈی گریس پر پہلی مرتبہ الزامات لگے تھے—فائل فوٹو: ای ٹی کینیڈا

شوبز ویب سائٹ کے مطابق نیشنل جیوگرافک نے نیل ڈی گریس کے خلاف مکمل کی گئی تحقیق کے نتائج کو خفیہ رکھا ہے، تاہم ان کے پروگرام کو نشر کرنے کی تصدیق کردی گئی ہے۔

مزید پڑھیں: نیل ڈی گریس پر خواتین کو جنسی ہراساں کرنے کا الزام

خیال رہے کہ 60 سالہ نیل ڈی گریس ٹائسن فلکی طبیعات کے ماہر ہونے سمیت فلکیات سے متعلق کتابوں کے لکھاری اور سائنسی پروگرامات خصوصی طور پر فلکیات سے متعلق پروگرامات کے میزبان ہیں۔

وہ نہ صرف لکھاری اور میزبان ہیں، بلکہ وہ کچھ سائنسی تحقیقاتی اداروں کے ساتھ بھی منسلک رہے اور اس وقت بھی وہ امریکا کے فلکی طبیعات سے متعلق کام کرنے والے اداروں کے ساتھ منسلک ہیں۔

نیل ڈی گریس ٹائسن دنیا بھر میں دیکھے جانے والے فلکی طبیعات پر مشتمل سائنسی پروگرام ’کاسموس‘ کے میزبان ہیں، یہ پروگرام ابتدائی طور پر امریکی ٹی وی چینل ’فاکس‘ پر نشر کیا گیا۔

اس پروگرام کا پہلا سیزن 2014 میں ’فاکس‘ پر نشر کیا گیا تھا۔

نیل ڈی گریس سائنسی پروگرامات کی وجہ سے دنیا بھر میں مشہور ہیں—فوٹو: ہولی وڈ رپورٹر
نیل ڈی گریس سائنسی پروگرامات کی وجہ سے دنیا بھر میں مشہور ہیں—فوٹو: ہولی وڈ رپورٹر