آن لائن نظام کے تحت 2 ہزار سے زائد غیرملکیوں کی پاکستانی ویزا کیلئے درخواستیں

اپ ڈیٹ 22 مئ 2019

ای میل

نادرا نے 6 مئی سے 12 مئی تک 2 لاکھ 77 ہزار افراد کا اپنے ڈیٹا بیس میں اندراج کیا۔ — فائل فوٹو: بلال کریم مغل
نادرا نے 6 مئی سے 12 مئی تک 2 لاکھ 77 ہزار افراد کا اپنے ڈیٹا بیس میں اندراج کیا۔ — فائل فوٹو: بلال کریم مغل

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان کی جانب سے دنیا کے 175 ممالک کو آن لائن ویزا کی سہولت فراہم کرنے کے اعلان کے بعد اب تک 2 ہزار 2 سو 50 غیرملکی آن لائن ویزا درخواستیں دے چکے ہیں۔

ڈان اخبار کی رپورٹ کے مطابق مذکورہ اعداد و شمار نیشنل ڈیٹا بیس اینڈ رجسٹریشن اتھارٹی (نادرا) کی جانب سے جاری کیے گئے ہیں۔

نادرا کی جانب سے جاری ہونے والے بیان کے مطابق اس کے بنائے گئے آن لائن ویزا نظام میں 6 مئی سے شروع ہونے والے پہلے ہفتے میں 7 سو 39 افراد کی درخواستیں موصول ہوئی تھیں جبکہ مجموعی طور پر 2 ہزار 2 سو 50 غیرملکیوں نے پاکستان کے ویزا کی خواہش کا اظہار کیا۔

مزید پڑھیں: کراچی: نادرا کے دفتر سے شناختی کارڈ کی چوری میں ملوث مرکزی ملزم گرفتار

واضح رہے کہ آن لائن ویزا کا نظام کا افتتاح وزیراعظم عمران خان نے رواں برس 14 مارچ کو کیا تھا جس کے تحت دنیا کے 175 ممالک کے شہریوں کو آن لائن ویزا کی سہولت فراہم کی جاسکے۔

حکومت پاکستان کا مقصد دنیا کے لیے پاکستان کی سرحد کو کھولنا تھا۔

اپنی کارکردگی سے متعلق نادرا کا کہنا ہے کہ 6 مئی سے 12 مئی تک اس نے 2 لاکھ 77 ہزار افراد کا اپنے ڈیٹا بیس میں اندراج کیا ہے جبکہ ان میں سے 37 ہزار افراد کو مفت شناختی دستاویزات فراہم کی جاچکی ہیں جن میں قومی شناختی کارڈ، اسمارٹ قومی شناختی کارڈ، خاندان اور بچوں کا اندراج اور بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کا شناختی کارڈ شامل ہے۔

یہ بھی پڑھیں: مخنث کے شناختی کارڈ کا اجرا نہ ہونے کی شکایت پر چیف جسٹس کا نوٹس

اس حوالے سے نئی پیشرفت اسمارٹ کارڈ ہے جس کی 2018 میں تقریباً 5 لاکھ سے زائد درخواستیں موصول ہوئیں، اس کے علاوہ موبائل رجسٹریشن وین بالخصوص دیہی علاقوں میں 10 لاکھ سے زائد لوگوں کا اندراج کیا گیا جن میں خواتین کی بڑی تعداد بھی شامل ہے۔

نادرا کا کہنا ہے کہ اس نے آن لائن درخواستوں کا نظام بھی متعارف کروایا ہے جس کے تحت لوگ گھر بیٹھے اپنے شناختی کارڈ بنواسکتے ہیں، تاہم اس کے تحت 3 لاکھ 17 ہزار 3 سو 7 افراد نے اپنے شناختی کارڈ بنوائے۔

اس کےعلاوہ نادرا نے 6 مئی سے 12 مئی کے درمیان ایسے 5 سو کیسز کو کلیئر کیا ہے جو تصدیق کے مراحل میں تھے یا پھر کسی وجہ سے بلاک کر دیے گئے تھے۔

نادرا نے دعویٰ کیا ہے کہ موجودہ چیئر مین نادرا کی جانب سے اٹھائے گئے اقدامات کی وجہ سے ادارے نے اندون سندھ، کراچی، جنوبی پنجاب میں اپنا انفرا اسٹرکچر کو جدید بنایا ہے جس کی وجہ سے اب 5 ہزار یومیہ ٹوکن کی تعداد بڑھ کر 17 ہزار یومیہ ہوگئی ہے۔

مزید پڑھیں: وہ ممالک جہاں جانے کے لیے پاکستانیوں کو ویزے کی ضرورت نہیں

اس کے علاوہ نادرا نے دنیا کے دیگر ممالک میں بھی اپنے قدم جمانا شروع کردیے ہیں اور مختلف ممالک کے لیے آئی ٹی خدمات فراہم کر رہا ہے۔

حال ہی میں نادرا نے براعظم آسٹریلیا (اوشیانو) کے چند جزائر پر مشتمل ملک فجی کی حکومت کے لیے الیکشن منیجمنٹ سیل قائم کیا ہے۔

اس کے علاوہ نادرا نے افریقی ممالک سوڈان اور صومالیہ کو بھی قومی شناخت کا نظام تیار کرکے دیا ہے۔