وزیراعظم کا نئی پیٹرولیم پالیسی تشکیل دینے کا اعلان

اپ ڈیٹ 23 مئ 2019

ای میل

وزیراعظم کے مطابق تیل اور گیس کی تلاش اور پیداوار کرنے والی غیر ملکی کمپنیوں کو مراعات فراہم کرنے کے لیے  پالیسی پر کام جاری ہے — فائل فوٹو/ اے ایف پی
وزیراعظم کے مطابق تیل اور گیس کی تلاش اور پیداوار کرنے والی غیر ملکی کمپنیوں کو مراعات فراہم کرنے کے لیے پالیسی پر کام جاری ہے — فائل فوٹو/ اے ایف پی

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ حکومت ملک میں تیل کی تلاش اور پیداوار پر کام کرنے والی کمپنیوں کو مراعات فراہم کرنے کے لیے نئی پیٹرولیم پالیسی پر کام کررہی ہے۔

ڈان اخبار کی رپورٹ کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے کویت پیٹرولیم کے چیف ایگزیکٹو آفیسر شیخ نواف سعود الصبا سے ملاقات کے دوران کہا کہ 'پیٹرولیم کے شعبے میں موجود صلاحیت کو استعمال کرنے کے حکومت، تیل اور گیس تلاش کرنے اور پیداوار کرنے والی غیر ملکی کمپنیوں کو مراعات فراہم کرنے کے لیے نئی پیٹرولیم پالیسی پر کام کررہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ 'اس کے ساتھ ہی ملک میں آسان اور منافع بخش کاروبار کی راہ ہموار کی جارہی ہے'۔

خیال رہے کہ کویت پیٹرولیم کے چیف ایگزیکٹو آفیسر شیخ نواف سعود الصبا نے وفد کے ہمراہ وزیراعظم عمران خان سے ملاقات کی تھی۔

مزید پڑھیں: اٹک میں تیل کی دریافت کیلئے کویتی کمپنی کو لائسنس جاری

اس موقع پر وفاقی وزیر توانائی عمر ایوب خان، وزیر توانائی پنجاب ڈاکٹر محمد اختر ملک اور سیکریٹری پیٹرولیم میاں اسد حئی الدین بھی موجود تھے۔

ملاقات میں شیخ نواف نے وزیراعظم کو کویت پٹرولیم کی جانب سے 1980سے پاکستان میں دریافت کے شعبے میں جاری کاروباری سرگرمیوں سے متعلق بریفنگ دی۔

وزیراعظم عمران خان نے حکومت کی جانب سے کویت پیٹرولیم کے ساتھ تعاون جاری رکھنے کی یقین دہانی کروائی۔

انہوں نے کویتی وفد کو حکومت کی جانب سے ملک میں غیر ملکی سرمایہ کاری میں سہولت فراہم کرنے سے متعلق کیے گئے مختلف اقدامات سے آگاہ کیا۔

یہ بھی پڑھیں: کراچی کے قریب سمندر سے تیل و گیس کے ذخائر نہ مل سکے

وزیراعظم نے پیٹرولیم کی تلاش اور پیداوار کے شعبے میں مقامی افرادی قوت کی تربیت پر کویت پیٹرولیم کی خدمات کو سراہا۔

اس موقع پر پنجاب کے وزیر توانائی نے پیٹرولیم کے شعبے میں پنجاب حکومت کی جانب سے کیے جانے والے مختلف اقدامات سے آگاہ کیا۔

ملاقات کے دوران ڈاکٹر عطا الرحمٰن نے وزیراعظم عمران خان کو وزیراعظم ہاؤس میں پاک-چین یونیورسٹی آف انجینئرنگ اینڈ ایمرجنگ ٹیکنالوجیز میں کی جانے والی پیش رفت سے آگاہ کیا۔

ڈاکٹر عطا الرحمٰن نے نالج اکنامی ٹاسک فورس کی جانب سے شروع کیے جانے والے منصوبوں سے آگاہ کیا۔