مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج پر حملہ، 5 اہلکار ہلاک

اپ ڈیٹ 12 جون 2019

ای میل

حملہ آوروں نے پیٹرولنگ ٹیم پر دستی بم بھی پھینکا — فائل فوٹو/اے پی
حملہ آوروں نے پیٹرولنگ ٹیم پر دستی بم بھی پھینکا — فائل فوٹو/اے پی

مقبوضہ کشمیر کے ضلع اننت ناگ میں مصروف سڑک پر بھارتی فوج پر حملے میں 5 اہلکار ہلاک اور 4 زخمی ہوگئے۔

دی ہندو کی رپورٹ کے مطابق سیکیورٹی فورسز کا کہنا تھا کہ ’2 موٹر سائیکل سوار حملہ آوروں نے پیٹرولنگ پر مامور سینٹرل ریزرو پولیس فورس (سی آر پی ایف) کو کے پی روڈ پر خودکار رائفل سے نشانہ بنایا اور دستی بم بھی پھینکا۔'

رپورٹ میں کہا گیا کہ سیکیورٹی فورسز نے جوابی کارروائی کرتے ہوئے ایک حملہ آور کو ہلاک کردیا، جبکہ اس کے قبضے سے ایک رائفل بھی بر آمد کرلی گئی۔

مزید پڑھیں: مقبوضہ کشمیر: بھارتی فوج کے بیس پر حملے میں ہلاکتوں کی تعداد 6 ہوگئی

دوسری جانب غیر ملکی خبر رساں ادارے 'اے پی' کی رپورٹ میں پولیس کا حوالہ دیتے ہوئے بتایا گیا کہ حملے میں 3 سیکیورٹی اہلکار اور ایک حملہ آور ہلاک ہوا۔

ان کا کہنا تھا کہ پولیس نے علاقے کو سیل کرتے ہوئے دوسرے حملہ آور کی تلاش شروع کردی ہے۔

خیال رہے کہ بھارت کے زیرِ تسلط کشمیر میں تقریباً 5 لاکھ بھارتی فوجی اہلکار موجود ہیں جہاں گزشتہ 30 برسوں سے بھارت سے آزادی اور پاکستان سے الحاق کی جدوجہد جاری ہے، نتیجتاً لاکھوں افراد زندگیوں سے محروم ہوچکے ہیں جن میں بڑی تعداد عام شہریوں کی ہے۔

یہ بھی پڑھیں: کشمیر میں ریموٹ کنٹرول دھماکا، 44 بھارتی فوجی ہلاک

یاد رہے کہ اس سے قبل 14 فروری کو مقبوضہ کشمیر کے ضلع پلوامہ میں بھارتی فوج کے قافلے پر ہونے والے خودکش حملے میں 44 فوجی اہلکار ہلاک ہوئے تھے۔

بھارتی حکومت اور میڈیا نے بغیر کسی تحقیقات کے اس حملے کا ملبہ پاکستان پر ڈال دیا تھا جس کے بعد دونوں ممالک کے درمیان کشیدگی میں اضافہ ہوا تھا۔