ٹرمپ نے بھارتی محصولات کو پھر ناقابل قبول قرار دے دی

اپ ڈیٹ 09 جولائ 2019

ای میل

ڈونلڈ ٹرمپ نے امریکا میں برطانوی سفیر کو ’احمق شخص‘ قرار دے دیا — فوٹو: اے ایف پی
ڈونلڈ ٹرمپ نے امریکا میں برطانوی سفیر کو ’احمق شخص‘ قرار دے دیا — فوٹو: اے ایف پی

امریکا کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے بھارت کی جانب سے امریکی مصنوعات پر برآمدی محصولات کو ایک بار پھر ناقابل قبول قرار دے دیا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے ’اے ایف پی‘ کے مطابق امریکی صدر نے الزام لگایا کہ بھارت امریکی مصنوعات کا راستہ روک رہا ہے۔

انہوں نے ٹوئٹ میں کہا کہ ’بھارت کے پاس امریکی مصنوعات پر برآمدی محصولات عائد کرنے کا فیلڈ ڈے ہے‘۔

ڈونلڈ ٹرمپ نے واضح کیا کہ ’اب یہ محصولات ناقابل قبول ہیں‘۔

واضح رہے کہ 27 جون کو امریکی صدر نے کہا تھا کہ ’میں بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی سے اس معاملے پر بات کروں گا کہ سالوں سے بھارت، امریکا پر محصولات عائد کر رہا ہے اور حال ہی میں اس ٹیرف میں مزید اضافہ کیا ہے، یہ ناقابلِ قبول ہے اور یہ محصولات لازمی طور پر ختم ہونے چاہئیں‘۔

یکم جون کو امریکا نے بھارت کو تجارت میں حاصل ترجیحی سہولت کا درجہ ختم کردیا تھا جس کے جواب میں بھارت نے 16 جون کو اخروٹ اور بادام سمیت 28 امریکی مصنوعات پر ٹیرف عائد کیے تھے۔

برطانوی سفیر ’احمق شخص‘ ہیں، ٹرمپ

اپنے دوسرے بیان میں ڈونلڈ ٹرمپ نے امریکا میں تعینات برطانوی سفیر کو ’احمق شخص‘ قرار دیا۔

ٹرمپ کو ’اناڑی‘ کہنے سے متعلق سفیر کی خفیہ ای میلز منظر عام پر آنے کے بعد امریکی صدر نے سفیر سے رابطہ منقطع کرنے کا اعلان کیا تھا۔

امریکی صدر نے ٹوئٹ میں کہا کہ ’میں برطانوی سفیر سر کِم ڈارک کو نہیں جانتا لیکن بتایا گیا کہ وہ انتہائی احمق ہیں‘۔

واضح رہے کہ برطانوی سفیر سر کِم ڈارک نے افشا ہونے والی ای میل میں امریکی صدر کے بارے میں کہا تھا کہ ’ٹرمپ کی قیادت میں وائٹ ہاؤس ’ناکارہ‘ ہو چکا ہے۔

علاوہ ازیں انہوں نے خبردار بھی کیا تھا کہ ڈونلڈ ٹرمپ کو نظر انداز بھی نہیں کیا جا سکتا۔