چین: سمندری طوفان کی تباہ کاریاں، ہلاکتوں کی تعداد 49 ہوگئیں

اپ ڈیٹ 13 اگست 2019

ای میل

طاقتور سمندری طوفان سے تقریباً 600 مکانات مکمل طور پر تباہ ہو گئے — فوٹو: اے ایف پی
طاقتور سمندری طوفان سے تقریباً 600 مکانات مکمل طور پر تباہ ہو گئے — فوٹو: اے ایف پی

چین کے مشرقی صوبے زی جیانگ میں سمندری طوفان 'لیکیما' سے ہونے والی ہلاکتیں 49 ہو گئی ہیں اور اب بھی 21 افراد لاپتہ ہیں۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے 'اے ایف پی' کی رپورٹ کے مطابق زی جیانگ صوبے کے متاثرہ شہروں کی گلیوں میں کیچڑ پھیلا ہوا ہے اور زمین بوس درختوں کے ساتھ ساتھ مکانات کی ٹوٹی ہوئی چھتوں کا ملبہ بھی بکھرا ہوا ہے۔

صوبائی حکام کے مطابق اس طوفان سے چینی معیشت کو 3.7 ارب امریکی ڈالر سے زائد کا نقصان ہو چکا ہے۔

مزید پڑھیں: چین میں سمندری طوفان سے 13 افراد ہلاک، 14 لاپتہ

ان کا کہنا تھا کہ طاقتور سمندری طوفان لیکیما سے تقریباً 600 مکانات مکمل طور پر تباہ ہو گئے۔

یہ طوفان زی جیانگ کی ساحلی پٹی سے 10 اگست کی صبح 190 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار کی ہوا کے دباؤ کے ساتھ ٹکرایا تھا جس کی وجہ سے ساحل پر کئی فٹ اونچی لہریں پیدا ہوئیں جنہوں نے ساحلی پٹی کو اپنی لپیٹ میں لے لیا۔

چینی میڈیا پر دکھائی گئی فوٹیج میں دیکھا گیا کہ ریسکیو اہلکار کشتیوں پر پھنسے افراد کو نکالتے رہے۔

طوفان کی وجہ سے ہزاروں پروازیں اور ٹرینیں منسوخ ہو گئیں۔

طوفان کے باعث ساحلی پٹی کے نزدیک قائم شنگھائی ڈزنی لینڈ سمیت ہزاروں سیاحتی مقامات کو بند کردیا گیا۔

واضح رہے کہ لیکیما طوفان ہفتے کے روز چین کے صوبے زی جیانگ سے ٹکرایا تھا۔

زیادہ تر ہلاکتیں طوفان کے آتے ہی زی جیانگ میں قدرتی بند کے ٹوٹنے سے ہوئی تھیں۔

شنڈونگ ایمرجنسی مینیجمنٹ بیورو کا کہنا تھا کہ صوبے سے 1 لاکھ 80 ہزار افراد کو نکال لیا گیا ہے۔