آزاد کشمیر میں لینڈ سلائیڈنگ سے 7 افراد جاں بحق

اپ ڈیٹ 17 اگست 2019

ای میل

ضلع پونچھ کے ایک گاؤں میں لینڈ سلائیڈنگ ہوئی—فوٹو:طارق نقاش
ضلع پونچھ کے ایک گاؤں میں لینڈ سلائیڈنگ ہوئی—فوٹو:طارق نقاش

آزاد جموں و کشمیر میں بارش کے بعد ہونے والی لینڈ سلائیڈنگ کے نتیجے میں ضلع پونچھ کے ایک گاؤں میں 3 گھر بہہ گئے جبکہ 7 افراد جاں بحق ہو گئے۔

ضلع پونچھ کی سب ڈویژن ہجیرہ کے اسٹیشن ہاؤس افسر (ایس ایچ او) راجا پرویز حمید کا کہنا تھا کہ پوتھی چپریان ہلوٹی گاؤں میں صبح سویرے لینڈ سلائیڈنگ کا واقعہ پیش آیا، جہاں قریب میں زیر تعمیر ہائیڈرو پاور منصوبے کے لیے آبی گزرگاہ (واٹر چینل) بھی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ شدید بارش کے باعث آبی گزرگاہ بھر گئی تھی جو پہاڑی علاقے میں واقع گاؤں میں لینڈ سلائیڈنگ کا باعث بن گئی اور گاؤں کے تین گھروں کو بہا کر لے گئی۔

راجا پرویز حمید کا کہنا تھا کہ تینوں گھروں کے مالکان آپس میں بھائی تھے جبکہ واقعے میں تینوں گھر مکمل طور پر تباہ ہوگئے۔

مزید پڑھیں:خیبر پختونخوا، آزاد کشمیر میں بارشوں کے باعث 53 ہلاکتیں

واقعے کے فوری بعد مقامی افراد نے جائے وقوع پر پہنچ کر اپنی مدد آپ کے تحت پھنسے ہوئے افراد کو نکال کر محفوظ مقام پر منتقل کیا۔

ایس ایچ او کے مطابق 50 سالہ خاتون زبیدہ اور ان کے بچوں ظہیر، انعم، ملائیکا، طیبہ اور لائبہ کو زخمی حالت میں نکال لیا گیا تاہم زبیدہ کو شدید جبکہ ان کے بچوں کو معمولی زخم آئے اور انہیں طبی امداد کے لیے ضلعی ہیڈکوارٹرز ہسپتال راولاکوٹ منتقل کردیا گیا۔

ان کا کہنا تھا کہ گاؤں کے رہائشی راج محمد کے گھر سے ان کی 40 سالہ اہلیہ ثوبیا اور بیٹیاں 11 سالہ تسمیہ، 9 سالہ علیشہ، 7 سالہ اسما اور 4 سالہ مہہ جبین کی لاشیں نکال لی گئی ہیں۔

راجا پرویز حمید کے مطابق اسی گھر سے راج محمد کے 18 سالہ بھتیجے شعیب مقصود کی لاش بھی ملی اور امدادی رضاکاروں نے تلاش کے بعد ملبے سے راج محمد کی ڈیڑھ سالہ بچی کی لاش بھی برآمد کرلی۔

یہ بھی پڑھیں:کراچی میں موسلادھار بارش، مختلف حادثات میں 11 افراد جاں بحق

ادھر علاقے میں شدید بارش کے باعث سڑکوں کی حالت انتہائی خراب ہوچکی ہے جس کے باعث امدادی کارروائیوں کے لیے بھاری مشینری پہنچانے میں رکاوٹیں ہیں۔

ایس ایچ او کا کہنا تھا کہ ‘ہم امدادی کام بیلچے اور دیگر اوزاروں کی مدد سے کررہے ہیں’۔

راجا پرویز حمید کے مطابق پونچھ کے ڈپٹی کمشنر مرزا ارشد محمود، ایس ایس پی ذوالقرنین سرفراز اور فوج کے مقامی کمانڈر بھی جائے وقوع پر موجود تھے اور امدادی کاموں کی نگرانی کر رہے تھے۔

آزاد جموں کشمیر کی انتظامیہ کے عہدیداروں کا کہنا تھا کہ مظفر آباد، وادی نیلم، جہلم، پونچھ اور حویلی اضلاع میں رواں برس بارش کے باعث کم ازکم 43 افراد جاں بحق اور 20 افراد زخمی ہو چکے ہیں۔