'مودی کے احمقانہ اقدامات بھارت کو لے ڈوبیں گے'

اپ ڈیٹ 25 اگست 2019

ای میل

وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید کا کہنا ہے کہ مقبوضہ کشمیر سے متعلق حالیہ اقدام بھارتی قیادت کا سوچا سمجھا منصوبہ ہے، نازی مودی کے احمقانہ اقدامات بھارت کو لے ڈوبیں گے۔

مظفر آباد میں مقبوضہ کشمیر سے اظہار یکجہتی کے لیے نکالی گئی ریلی سے خطاب کرتے ہوئے شیخ رشید نے دعویٰ کیا کہ 'عمران خان پہلے وزیراعظم ہیں جو مسئلہ کشمیر اقوام متحدہ لے کر گئے'۔

ان کا کہنا تھا کہ 'بھارت کو پاکستان اور چین کی دوستی کھٹکتی ہے، پاکستانی عوام خطے میں بھارت کی حکمرانی کے خواب کو پاش پاش کردیں گے'۔

مزید پڑھیں: کشمیری خاتون کی طیارے میں بھارتی اپوزیشن رہنما سے دردناک فریاد

انہوں نے کہا کہ مودی کی وجہ سے پاکستان میں ہم سب ایک ہوگئے، 'جو کشمیر کا غدار ہوگا وہ مودی کا یار ہوگا'۔

ریلی کے شرکا سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پاکستان کو اندر سے توڑنا بھارت کا ایجنڈا ہے اور بھارت کا آزاد کشمیر پر حملہ کرنا اعلان جنگ ہوگا'۔

انہوں نے کہا کہ 'مسئلہ کشمیر پر پاکستان کی تمام سیاسی قیادت ایک پیج پر ہے'۔

قبل ازیں وزیر ریلوے نے صدر آزاد کشمیر مسعود خان سے ملاقات کی تھی جس میں انہوں نے صدر آزاد کشمیر کو یقین دہانی کروائی کہ 'عمران خان کی قیادت میں مقبوضہ کشمیر کا مقدمہ ہر فورم پر لڑا جائے گا اور ساری دنیا کو بھارتی مظالم سے آگاہ کیا جائے گا'۔

یہ بھی پڑھیں: وزیر ریلوے شیخ رشید نےسمجھوتا ایکسپریس بند کرنے کا اعلان کر دیا

ان کا کہنا تھا کہ 'کشمیریوں کے ساتھ کھڑے ہیں ہر سطح پر ساتھ دیں گے'۔

شیخ رشید نے توقع ظاہر کی کہ جنرل اسمبلی سے وزیراعظم عمران خان کا خطاب اہم ہوگا جس میں وہ دنیا کو بھارتی مظالم سے آگاہ کریں گے۔

خیال رہے کہ وزیر ریلوے شیخ رشید ان دنوں مقبوضہ کشمیر کے لوگوں سے اظہار یک جہتی کے لیے آزاد کشمیر میں موجود ہیں۔

گزشتہ روز وفاقی حکومت نے مقبوضہ کشمیر کے شہریوں پر ہونے والے بھارتی مظالم اور حالیہ صورتحال کے پیش نظر کشمیری عوام کی حمایت میں قومی یکجہتی کا دن منانے کا اعلان کیا تھا۔

گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور کے ہمراہ گورنر ہاؤس لاہور میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے وزیر اعظم کی معاون خصوصی برائے اطلاعات فردوس عاشق اعوان کا کہنا تھا کہ آئندہ ہفتے کسی بھی روز قومی یکجہتی کا دن منایا جائے گا۔

انہوں نے مزید کہا کہ یہ پورا دن کشمیریوں کے لیے مخصوص ہوگا جہاں پورا پاکستان کشمیر کاز کے لیے اپنے عزم، محبت، احترام اور اتحاد کا پیغام دے گا۔

مزید پڑھیں: حکومت کا کشمیریوں کے ساتھ 'قومی یکجہتی کا دن' منانے کا اعلان

واضح رہے کہ بھارت نے 5 اگست کو مقبوضہ جموں اور کشمیر کی خصوصی حیثیت تبدیل کردی تھی اور اس سے متعلق اپنے آئین کے آرٹیکل 370 کو ختم کردیا تھا جبکہ وادی میں مزید فوج بھیج کا وہاں کرفیو نافذ کرنے کے ساتھ ساتھ مواصلات کے تمام ذرائع معطل کردیئے گئے تھے۔

بھارت کے مذکورہ اقدام کو جہاں مقبوضہ وادی کے کشمیریوں نے مسترد کیا وہی پاکستان میں بھی اس کے خلاف بھرپور آواز اٹھائی گئی، جس کے بعد سے دونوں ممالک کے درمیان تعلقات خراب ہیں جبکہ لائن آف کنٹرول پر بھی بھارتی فورسز کی جانب سے جنگ بندی کی خلاف ورزی کا سلسلہ جاری ہے۔