عراقی حکومت کی جانب سے دارالحکومت بغداد سے کرفیو ہٹانے کے باوجود مظاہروں میں مزید شدت آگئی جہاں پولیس کے ساتھ تصادم اور فائرنگ کے نتیجے میں اب تک 93 افراد کے ہلاک ہونے کی تصدیق ہو چکی ہے۔

یکم اکتوبر کو عراق میں بے روزگاری، کرپشن کے خلاف اور حکومت کی تبدیلی کے مطالبے پر شروع ہونے والے احتجاج میں شدت آگئی ہے۔

عراق کے بااثر مذہبی رہنما مقتدیٰ الصدر نے بھی مظاہرین کی حمایت کرتے ہوئے وزیر اعظم عادل عبدالمہدی سے استعفیٰ دینے کا مطالبہ کردیا۔

پارلیمنٹ کے اسپیکر محمد الحالبوسی نے معاملے پر سیشن کی صدارت سے قبل مظاہرین کی حمایت کا اشارہ دیتے ہوئے کہا کہ ‘آپ کی آواز سنائی جارہی ہے’۔

عراقی حکومت کے خلاف احتجاج میں اکثریت نوجوانوں کی ہے جن کا کہنا ہے کہ ان کا کسی بھی سیاسی یا مذہبی جماعت سے کوئی تعلق نہیں ہے اور ساتھ سیاست دانوں کے کردار پر بھی تنقید کی۔

بے روزگاری، کرپشن کےخلاف اور حکومت کی تبدیلی کے مطالبے پر شروع ہونے والے احتجاج میں شدت آگئی ہے — فوٹو: اے ایف پی
بے روزگاری، کرپشن کےخلاف اور حکومت کی تبدیلی کے مطالبے پر شروع ہونے والے احتجاج میں شدت آگئی ہے — فوٹو: اے ایف پی
بے روزگاری، کرپشن کےخلاف اور حکومت کی تبدیلی کے مطالبے پر شروع ہونے والے احتجاج میں شدت آگئی ہے — فوٹو: اے ایف پی
بے روزگاری، کرپشن کےخلاف اور حکومت کی تبدیلی کے مطالبے پر شروع ہونے والے احتجاج میں شدت آگئی ہے — فوٹو: اے ایف پی
بغداد میں مظاہرے کے دوران زخمی ہونے والا ایک شخص زمین پر لیٹا ہوا ہے — فوٹو: اے پی
بغداد میں مظاہرے کے دوران زخمی ہونے والا ایک شخص زمین پر لیٹا ہوا ہے — فوٹو: اے پی
مظاہرے کے دوران زخمی ہونے والے ایک شخص کو ہسپتال منتقل کیا جارہا ہے — فوٹو: اے پی
مظاہرے کے دوران زخمی ہونے والے ایک شخص کو ہسپتال منتقل کیا جارہا ہے — فوٹو: اے پی
حکومت مخالف مظاہرین کو منتشر کرنے کیلئے سیکیورٹی فورسز آنسو گیس استعمال کر رہی ہے — فوٹو: اے پی
حکومت مخالف مظاہرین کو منتشر کرنے کیلئے سیکیورٹی فورسز آنسو گیس استعمال کر رہی ہے — فوٹو: اے پی
مظاہرین کی جانب سے جلاؤ گھیراؤ کا سلسلہ بھی جاری ہے — فوٹو: اے پی
مظاہرین کی جانب سے جلاؤ گھیراؤ کا سلسلہ بھی جاری ہے — فوٹو: اے پی
مظاہروں کے دوران تصام سے ہلاک ہونے والے ایک شخص کے عزیز صدمے سے رو رہے ہیں — فوٹو: رائٹرز
مظاہروں کے دوران تصام سے ہلاک ہونے والے ایک شخص کے عزیز صدمے سے رو رہے ہیں — فوٹو: رائٹرز
تصادم میں ہلاک ہونے والے ایک شخص کا جسد خاکی لے جایا جارہا ہے — فوٹو: رائٹرز
تصادم میں ہلاک ہونے والے ایک شخص کا جسد خاکی لے جایا جارہا ہے — فوٹو: رائٹرز
بغداد کے تحریر اسکوائر پر مظاہرین کو آگے بڑھنے سے روکنے کیلئے سیکیورٹی فورسز نے سڑک بند کر رکھی ہے — فوٹو: اے پی
بغداد کے تحریر اسکوائر پر مظاہرین کو آگے بڑھنے سے روکنے کیلئے سیکیورٹی فورسز نے سڑک بند کر رکھی ہے — فوٹو: اے پی
تحریر اسکوائر پر مظاہرین سے نبرد آزما ہونے کیلئے فورسز کے اہلکار جمع ہیں — فوٹو: اے ایف پی
تحریر اسکوائر پر مظاہرین سے نبرد آزما ہونے کیلئے فورسز کے اہلکار جمع ہیں — فوٹو: اے ایف پی

ای میل

ویڈیوز

برطانوی شاہی جوڑے کی پاکستان آمد کے مناظر
پاکستانی گانوں کی سمندر پار بھی دھوم
بہادر نوجوان نے ڈکیتی کی کوشش ناکام بنادی
'ملک کو دھمکیوں سے نہیں چلایا جاسکتا'

تصاویر

جاپان کی تاریخ کا طاقتور ترین طوفان 'ہگی بِس'
ملک بھر میں کشمیریوں سے اظہار یکجہتی
پنک ڈے پر سری لنکا کا وائٹ واش
'ہم ایوارڈز' میں کس کا انداز سب سے متاثر کن رہا؟

تبصرے (0) بند ہیں