'حکومت ناکارہ سمجھتی ہے تو قطار میں کھڑا کر کے گولی مار دے'

اپ ڈیٹ 12 نومبر 2019

ای میل

لاہور میں بصارت سے محروم افراد کے دھرنے کے دوران ایک نابینا شخص نے کہا ہے کہ اگر حکومت ہمیں معاشرے کا حصہ نہیں بنا سکتی اور سمجھتی ہے کہ ہم بیکار ہیں تو ایک قطار میں کھڑا کر کے ہمیں گولی مار دیں کیونکہ حکومت سے ہم اور توقع بھی کیا کر سکتے ہیں۔

لاہور کے مال روڈ پر 9 روز سے بصارت سے محروم افراد کا دھرنا جاری ہے جسے ختم کروانے کے لیے حکومت پنجاب نے نذیر چوہان کی سربراہی میں مانیٹرنگ کمیٹی تشکیل دی تھی۔

حکومت کی جانب سے تشکیل کردہ کمیٹی تاحال بصارت سے محروم افراد کا دھرنا ختم کروانے میں ناکام رہی ہے۔

احتجاج کرنے والے نابینا افراد نے حکومت پنجاب سے نوکریاں دینے اور کنٹریکٹ ملازمین کو مستقل کرنے کا دو ٹوک مطالبہ کیا ہے۔

نابینا افراد کا کہنا ہے کہ اب وہ حکومت کے کسی جھانسے میں نہیں آئیں گے اور نہ ہی مطالبات کی منظوری تک دھرنا ختم کریں گے۔