کیا شہزادہ چارلس بھارتی گلوکارہ کے باعث کورونا کا شکار ہوئے؟

اپ ڈیٹ 27 مارچ 2020

ای میل

فوٹو: ٹوئٹر
فوٹو: ٹوئٹر

بھارتی گلوکارہ کنیکا کپور نے رواں ماہ سوشل میڈیا پر انکشاف کیا تھا کہ ان میں کورونا وائرس کی تشخیص ہوئی ہے، جس کے بعد گلوکارہ کو لاپرواہی برتنے پر تنقید کا نشانہ بنایا گیا۔

گلوکارہ میں کورونا وائرس کی تشخیص کے چند روز بعد برطانوی شہزادے چارلس میں بھی کورونا کی تصدیق ہوگئی اور اب ان دونوں شخصیات کے حوالے سے ٹوئٹر پر ایک نئی بحث چھڑ گئی ہے۔

مزید پڑھیں: بھارتی گلوکارہ میں کورونا کی تصدیق، سفری تاریخ خفیہ رکھنے کا الزام

کنیکا کپور کو گزشتہ کئی روز سے سماجی روابط کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر شدید تنقید کا نشانہ بنایا جارہا ہے اور اب ان پر برطانوی شہزادے چارلس کو کورونا وائرس سے متاثر کرنے کا الزام بھی عائد کردیا گیا۔

یاد رہے کہ کنیکا کپور رواں سال 9 مارچ کو لندن سے ممبئی پہنچی تھیں جس کے بعد وہ لکھنؤ روانہ ہوئیں جہاں ان میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوئی۔

برطانیہ میں گزارے اپنے وقت کے دوران گلوکارہ نے کئی بڑے ایونٹس میں شرکت کی اور چند رپورٹس کے مطابق ان ایونٹس میں سے چند میں ان کی ملاقات شہزادہ چارلس سے بھی ہوئی۔

ٹوئٹر پر ان دونوں کی ملاقات کی چند تصاویر بھی وائرل ہورہی ہیں جن پر کچھ لوگوں نے کنیکا کپور کو تنقید کا نشانہ بنایا جبکہ کچھ یہ سوچ کر پریشان نظر آئے کہ آخر ان دونوں میں کون کس کی وجہ سے متاثر ہوا۔

تاہم حقیقت یہ ہے کہ ان دونوں میں سے کوئی بھی کورونا وائرس سے ایک دوسرے کی وجہ سے متاثر نہیں ہوا۔

ہندوستان ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق سوشل میڈیا پر وائرل یہ تصاویر درحقیقت سال 2015 کی ہیں جب شہزادہ چارلس اور ان کی اہلیہ کمیلا نے لندن میں ایک ایونٹ منعقد کیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں: برطانوی شہزادہ چارلس بھی کورونا کا شکار

2015 کے اس ایونٹ میں کنیکا کپور بھی شریک ہوئیں تھی جبکہ جون 2019 میں لندن میں منعقد ایک ایونٹ کا حصہ بننے کے بعد بھی گلوکارہ نے شہزادہ چارلس کے ہمراہ ایک تصویر شیئر کی تھی۔

کنیکا کپور کا شمار بولی وڈ کی کامیاب گلوکاراؤں میں کیا جاتا ہے، وہ ’بے بی ڈول‘، ’جنم جنم‘، ’امبر سریا‘ اور ’بیٹ پہ بوٹی‘ جیسے مقبول گانے گاچکی ہیں۔

یاد رہے کہ گزشتہ سال 31 دسمبر کو چینی حکام نے عالمی ادارہ صحت کو نوول کورونا وائرس کی وبا سے آگاہ کیا تھا جسے 20 فروری 2020 کو سارز کوو 2 کا نام دیا گیا جبکہ اس سے ہونے والی بیماری کو کووڈ 19 کا نام دیا گیا۔

یہ وبا چین کے شہر ووہان میں سامنے آئی تھی جس کے بعد اس نے دیکھتے ہی دیکھتے دنیا بھر کو اپنی لپیٹ میں لے لیا۔