فلم ہو یا حقیقت، کوئی بھی پرفیکٹ نہیں ہوتا، عالیہ بھٹ

اپ ڈیٹ 05 اکتوبر 2022
اداکارہ کے مطابق خواتین دوسروں کے لیے خود کو نہ بدلیں—فوٹو: انسٹاگرام
اداکارہ کے مطابق خواتین دوسروں کے لیے خود کو نہ بدلیں—فوٹو: انسٹاگرام

بولی وڈ اداکارہ عالیہ بھٹ کا کہنا ہے کہ خواتین کو یہ بات سمجھنے کی ضرورت ہے کہ وہ خود کیا ہیں، انہیں کسی اور کے اصولوں کے مطابق خود میں تبدیلیاں کرنے کی ضرورت نہیں۔

اداکارہ نے حال ہی میں سنگاپور مین منعقد ہونے والا ٹائمز میگزین کا امپیکٹ ایوارڈ حاصل کیا اور اس دوران انہوں نے تقریب سے خطاب بھی کیا، جس کی جھلکیاں انہوں نے انسٹاگرام پر شیئر کرتے ہوئے اپنی پوسٹ میں لکھا کہ آج کل خواتین کے لیے بہت زیادہ اصول بنادیے گئے ہیں جیسا کہ خواتین کو زور سے نہیں بولنا، انہیں بہت زیادہ موٹا اور بہت کمزور نظر نہیں ہونا، عزائم رکھیں مگر اپنی حد سے تجاوز نہ کریں، پراعتماد ہونا ہے لیکن مغرور نہین ہونا۔

انہوں نے پوسٹ میں لکھا کہ مذکورہ اور ان جیسے بہت سارے اصول ہیں جو دانستہ یا نادانستہ طور پر خواتین سے جوڑ دیے گئے ہیں، ایسے میں ہم اپنی خامیوں کو نظر انداز کردیتے ہیں جو کہ یہ ایک نا ممکن سی بات ہے کیونکہ ایسا صرف کہانیوں میں ہی ممکن ہوسکتا ہے۔

انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ ہماری شخصیت میں موجود خامیاں ہی درحقیقت ہماری اپنی ذات سے پہچان کرواتی ہیں ۔

انہوں نے اپنی بات جاری رکھتے ہوئے کہا کہ وہ معاشرے کی اس سوچ کے خلاف ہیں، انہوں نے کہا کہ گزشتہ دس سالوں میں وہ یہ بات پوری طرح جان گئی ہیں کہ ہمیشہ پرفیکٹ ہونا ضروری نہیں، بعض اوقات یہ بورنگ ہوتا ہے درحقیقت یہ ہماری خامیاں ہی ہیں جو ہمیں خود سے ملواتی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ وہ اپنی فلموں اور کرداروں سے ایسے لوگوں کو سامنے لائی ہیں جن میں خامیاں ہیں کیونکہ آخر میں یہ خامیاں ہی ہیں جو ایک عام سے کردار میں جان ڈال دیتی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ میں یہاں یہ بتانا چاہتی ہوں کہ خود پر یقین ر کھنے سے ہماری شخصیت دوسروں کے لیے متاثر کن بن سکتی ہے۔

ڈارلنگ کی اداکارہ نے مزید کہا کہ آپ آن اسکرین اور آف اسکرین ویسا ہی رہیں جیسا کہ آپ ہیں، چاہے فلم ہو یا زندگی، ہمارا پرفیکٹ ہونا ضروری نہیں، ہماری زندگی کے اتار چڑھاؤ ہی ہماری حقیقت ہیں، جن کے بارے میں بات کرتے ہوئے ہمیں گھبرانا نہیں چاہیے۔

ضرور پڑھیں

تبصرے (0) بند ہیں