Dawn News Television Logo
<p>بلوچستان میں ایک عورت اور بچے بارش اور سیلاب کے بعد اپنے تباہ شدہ مکان کے بغیربارش کے پانی میں بیٹھے ہیں —فوٹو: رائٹرز</p>

ملک بھر میں سیلاب کی تباہ کاریاں

سندھ، بلوچستان اس سیلاب سے شدید متاثر ہوئے ہیں جہاں لاکھوں لوگ بے گھر ہو چکے ہیں۔
اپ ڈیٹ 28 اگست 2022 03:56pm

حکومت کی جانب سے مون سون کی بارشوں کے دوران سیلاب کی تباہکاریوں سے نمٹنے کے لیے کئی اضلاع میں ہنگامی صورت حال نافذ کردیا ہے جبکہ آج بھی ملک کے بیشتر علاقوں میں موسلا دھار بارش ہوئی۔

حکومت کا کہنا ہے کہ ملک بھر میں 3 کروڑ لوگ سیلاب سے متاثر ہوئے ہیں۔

وزیراعظم شہباز شریف نے کہا ہے کہ متاثرین میں 28 ارب روپے تقسیم کیے جائیں گے جو پہلے ہی بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام کے حوالے کیے جا چکے ہیں اور یہ معاملہ یہیں ختم نہیں ہوگا بلکہ امداد کی رقم مزید بڑھائی جائے گی۔

سیلاب سے سب سے زیادہ متاثر ہونے والے علاقے بلوچستان اور سندھ میں ہیں لیکن خیبرپختونخوا میں بھی شہری شدید متاثر ہوئے ہیں۔

جامشورو میں سیلاب متاثرین خیموں میں پناہ لیے ہوئے ہیں —فوٹو: رائٹرز
جامشورو میں سیلاب متاثرین خیموں میں پناہ لیے ہوئے ہیں —فوٹو: رائٹرز
مون سون بارشوں کے بعد پیدا ہونے والی سیلابی صورت حال میں ایک مسجد زیر آب نظر آ رہی ہے —فوٹو:رائٹرز
مون سون بارشوں کے بعد پیدا ہونے والی سیلابی صورت حال میں ایک مسجد زیر آب نظر آ رہی ہے —فوٹو:رائٹرز
سیلاب متاثرہ خاتون  اور ان کے بچے جامشورو میں اپنے خیمے کے باہرامداد کے منتظر ہیں—فوٹو: رائٹرز
سیلاب متاثرہ خاتون اور ان کے بچے جامشورو میں اپنے خیمے کے باہرامداد کے منتظر ہیں—فوٹو: رائٹرز
مون سون بارشوں کے بعد سیلاب سے متاثر ہونے والے افراد خیموں پر پناہ لینے پر مجبور ہیں—فوٹو: رائٹرز
مون سون بارشوں کے بعد سیلاب سے متاثر ہونے والے افراد خیموں پر پناہ لینے پر مجبور ہیں—فوٹو: رائٹرز
سندھ کے شہر جامشورو میں سیلاب سے متاثرہ خواتین طبی امداد کا انتظار کر رہی ہیں —فوٹو: رائٹرز
سندھ کے شہر جامشورو میں سیلاب سے متاثرہ خواتین طبی امداد کا انتظار کر رہی ہیں —فوٹو: رائٹرز
بارشوں کے بعد سیلاب کی زد میں آنے والا ایک خاندان اپنا سامان لے کر محفوظ مقام پر منتقل ہو رہا ہے —فوٹو: رائٹرز
بارشوں کے بعد سیلاب کی زد میں آنے والا ایک خاندان اپنا سامان لے کر محفوظ مقام پر منتقل ہو رہا ہے —فوٹو: رائٹرز
سیلاب سے متاثر ہونے والا ایک خاندان محفوظ مقام کی طرف جا رہا ہے—فوٹو:رائٹرز
سیلاب سے متاثر ہونے والا ایک خاندان محفوظ مقام کی طرف جا رہا ہے—فوٹو:رائٹرز
بلوچستان کا ضلع جعفرآباد میں مون سون کی بارشوں اور سیلاب کے بعد متاثرین مختلف مقامات پر پناہ لیے ہوئے ہیں —فوٹو: رائٹرز
بلوچستان کا ضلع جعفرآباد میں مون سون کی بارشوں اور سیلاب کے بعد متاثرین مختلف مقامات پر پناہ لیے ہوئے ہیں —فوٹو: رائٹرز
بلوچستان کے ضلع جعفرآباد میں سیلاب متاثر بچے اور خواتین محفوظ مقامات کی طرف منتقل ہو رہے ہیں —فوٹو:رائٹرز
بلوچستان کے ضلع جعفرآباد میں سیلاب متاثر بچے اور خواتین محفوظ مقامات کی طرف منتقل ہو رہے ہیں —فوٹو:رائٹرز
ضلع جعفرآباد میں ایک شخص سیلاب سے متاثرہ ہونے کے بعد اپنے گھر سے سامان لے کر جا رہا ہے—فوٹو: رائٹرز
ضلع جعفرآباد میں ایک شخص سیلاب سے متاثرہ ہونے کے بعد اپنے گھر سے سامان لے کر جا رہا ہے—فوٹو: رائٹرز
بلوچستان کے علاقے ڈیرہ اللہ یارمیں مون سون بارشوں اور سیلاب کے بعد ایک شخص اپنے تباہ شدہ مکان کے پاس سیلابی پانی سے گزر رہا ہے—فوٹو:رائٹرز
بلوچستان کے علاقے ڈیرہ اللہ یارمیں مون سون بارشوں اور سیلاب کے بعد ایک شخص اپنے تباہ شدہ مکان کے پاس سیلابی پانی سے گزر رہا ہے—فوٹو:رائٹرز
بلوچستان کے ضلع جعفرآباد میں بارشوں اور سیلاب سے متاثرہ بچے خیموں کے باہر کھڑے ہیں—فوٹو:رائٹرز
بلوچستان کے ضلع جعفرآباد میں بارشوں اور سیلاب سے متاثرہ بچے خیموں کے باہر کھڑے ہیں—فوٹو:رائٹرز
بلوچستان میں سیلاب متاثرین نے خیموں میں پناہ لی ہوئی ہے —فوٹو:رائٹرز
بلوچستان میں سیلاب متاثرین نے خیموں میں پناہ لی ہوئی ہے —فوٹو:رائٹرز
بارش اور سیلاب کے بعد لوگ تباہ شدہ مکان سے سامان جمع کررہے ہیں —فوٹو: رائٹرز
بارش اور سیلاب کے بعد لوگ تباہ شدہ مکان سے سامان جمع کررہے ہیں —فوٹو: رائٹرز
حیدرآباد میں سیلاب زدہ گلی عبور کرنے کے لیے شہری عارضی کشتی استعمال کررہے ہیں —فوٹو: رائٹرز
حیدرآباد میں سیلاب زدہ گلی عبور کرنے کے لیے شہری عارضی کشتی استعمال کررہے ہیں —فوٹو: رائٹرز
حیدرآباد میں مون سون بارش کے بعد لوگ سیلاب زدہ سڑک سے  گدھا گاڑی پر سوارہوکر گزر رہے ہیں —فوٹو:رائٹرز
حیدرآباد میں مون سون بارش کے بعد لوگ سیلاب زدہ سڑک سے گدھا گاڑی پر سوارہوکر گزر رہے ہیں —فوٹو:رائٹرز