ای میل

چوبیس گھنٹے کی مسلسل چلنے والے خبروں کے چکر اور شہر بھر میں پرتشدد حملوں کی خوفناک شرح نے کراچی کے رہائشیوں کو ان افراد کی خدمات فراموش کرنے پر مجبور کردیا ہے جو اپنے ساتھی شہریوں کے تحفظ کے لیے اپنی زندگیوں کو خطرات میں ڈال دیتے ہیں۔

کراچی میں پُرتشدد اور انتہا پسند عناصر کے خلاف دلیری سے لڑنے اور کامیابیاں حاصل کرنے والے ایسے ہی باہمت افراد کو سراہنے کے لیے آئی ہارٹ کراچی نامی مختصر دستاویزی سیریز کو تیار کیا گیا ہے۔

اس سیریز کے بارے میں بات کرتے ہوئے فلم و ٹی وی ڈائریکٹر شرمین عبید چنائے نے بتایا 'آئی ہارٹ کراچی میرے لیے بہت خاص پراجیکٹ تھا، کراچی میرا آبائی گھر ہے اور میں نے یہاں گزرے برسوں میں تشدد کی شرح کو بڑھتے دیکھا ہے، مگر اس شہر نے تمام تر مشکلات کا مقابلہ کیا ہے اور ہم نے ایسے ہی پانچ افراد کی غیرمعمولی کوششوں کو نمایاں کیا ہے جو روزانہ شہر کو بدامنی سے بچانے اور اس کے باسیوں کو تحفظ فراہم کرنے کے لیے اپنی زندگی کی قربانی دینے سے بھی گریز نہیں کرتے۔

یہ منفرد پانچ حصوں پر مشتمل سیریز پانچ عام افراد کے کراچی کیلئے کیے جانے والے غیرمعمولی کاموں کو اجاگر کرتی ہے، ان کی کہانیاں ناصرف تشدد کے بے قابو اور خاص واقعات کے بارے میں معلومات فراہم کریں گی بلکہ اس سے کراچی کے رہائشیوں کے اندر ایک امید بھی پیدا کی جائے گی کہ ہم ایک برادری کی حیثیت سے مل کر جوابی مزاحمت کریں گے اور ہر طرح کی مشکلات پر قابو پائیں گے۔

اس سیریز کے ایک حصے میں کرابی ویسٹ زون میں بم ڈسپوزل اسکواڈ کے انچارج عابد فاروق کی زندگی کی غیرمعمولی کہانی بیان کی گئی ہے جو 1998 سے خدمات سرانجام دے رہے ہیں، کراچی ویسٹ زون، اورنگی، بلدیہ، ماڑی پور، کیماڑی اور گڈاپ ٹاﺅن پر مشتمل ہے اور یہاں بڑی تعداد میں بموں کے ملنے کی اطلاعات موصول ہوتی ہیں، عابد کی کہانی یہ رہی۔