قبرص: برطانوی لڑکی کے 'گینگ ریپ' کے الزام میں 11 اسرائیلی گرفتار

اپ ڈیٹ 18 جولائ 2019

ای میل

کینگ ریپ کے الزام میں گرفتار اسرائیلی نوجوان کو عدالت میں پیش کیا جارہا ہے — فوٹو: دی گارجین
کینگ ریپ کے الزام میں گرفتار اسرائیلی نوجوان کو عدالت میں پیش کیا جارہا ہے — فوٹو: دی گارجین

قبرص میں جواں سالہ برطانوی لڑکی کو گینگ ریپ کا نشانہ بنانے والے 11 اسرائیلی نوجوانوں کو گرفتار کر لیا گیا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے 'اے ایف پی' کے مطابق اسرائیلی سیاحوں نے متاثرہ لڑکی کو اس کے ہوٹل کے کمرے میں زیادتی کا نشانہ بنایا۔

بعد ازاں پولیس نے زیر حراست اسرائیلی نوجوانوں کو ضلعی عدالت میں پیش کر کے ان ریمانڈ کی استدعا کی۔

پارہلی مانی کی ضلعی عدالت میں پیش کردہ اسرائیلی نوجوانوں کے خلاف پولیس نے موقف اختیار کیا کہ ملزمان کو 8 دن کے لیے جسمانی ریمانڈ پر حوالے کیا جائے۔

عدالت نے 19 سالہ برطانوی لڑکی کو گینگ ریپ کا نشانہ بنانے والے 11 اسرائیلی سیاحوں کو ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کردیا۔

یہ بھی پڑھیں: پاک بھارت کشیدگی میں اسرائیل کا بھی ہاتھ ہے

عدالت میں پیش کردہ ملزمان کی عمریں 16 سے 18 سال کے درمیان تھی۔

زیرحراست اسرائیلی نوجوانوں کے سر ڈھانپ کر عدالت میں پیش کیا گیا اور بند کمرے میں عدالتی کارروائی ہوئی۔

مزیدپڑھیں: اسرائیلی وفد کا دورہ بحرین سیکیورٹی خدشات پر منسوخ

زیر حراست اسرائیلی نوجوانوں کے بعض اہلخانہ عدالتی کارروائی کے وقت موجود تھے۔

اس ضمن میں بتایا گیا کہ گزشتہ روز 19 سالہ برطانوی سیاح کو اسرائیلی نوجوانوں نے ہوٹل کے پارٹی ریزورٹ میں 'ریپ' کا نشانہ بنایا۔

دوسری جانب اسرائیل کے وزیر خارجہ نے اعلامیے میں کہا کہ اسرائیل قونصلر یوسی ورمبرانڈ پیش رفت سے آگاہ ہیں اور زیر حراست اسرائیلی نوجوانوں سے رابطے میں ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ ریپ کے الزام میں گرفتار اسرائیلی نوجوانوں کے اہلخانہ کو حالیہ پیش رفت سے متعلق آگاہ کردیا گیا ہے۔