2 سال میں 152 کلو وزن کم کرنے والی خاتون

19 جون 2019

ای میل

— فوٹو بشکریہ بریٹینی مے انسٹاگرام پیج
— فوٹو بشکریہ بریٹینی مے انسٹاگرام پیج

جسمانی وزن میں اضافہ اکثر افراد کو پریشان کردیتا ہے اور اکثر اس سے نجات کے لیے ان کے پاس مختلف وجوہات ہوتی ہیں، جیسے صحت کے مسائل یا رشتے ٹوٹنے کا ڈر۔

مگر ایک خاتون نے اپنی ملازمت کے لیے خود کو بدل کر دکھایا۔

2016 میں بریٹینی مے کا وزن 234 کلوگرام ہوچکا تھا اور ان کے لیے زراعت پڑھانے کا کام مشکل ترین ہوگیا تھا کیونکہ وہ طالبعلموں کو باہر لے جانے سے قاصر ہوگئی تھیں۔

اس وقت انہیں احساس ہوا کہ جسمانی وزن بہت زیادہ بڑھ چکا ہے، جس کے بعد انہوں نے خود کو بدلنے کا فیصلہ کیا اور اس کے لیے اپنی ایک دوست سے مدد لی جو اس سے قبل وزن کم کرنے میں کامیاب ہوچکی تھی۔

اور محض 2 سال کے اندر 152 کلو سے زائد وزن کم کرنے میں کامیاب رہیں۔

اس کے لیے بریٹینی نے بس اپنی غذا اور ورزش کے معمولات میں معمولی تبدیلیاں کی جو کہ انتہائی موثر ثابت ہوئیں۔

انہوں نے بتایا 'میں نے بتدریج اپنی عادات کو بدلنا شروع کیا اور سبزیوں اور پروٹین والی غذاﺅں کا استعمال شروع کردیا'۔

اسی طرح فوری طور پر جم جانے کی بجائے آہستہ آہستہ جسمانی سرگرمیوں کا حصہ بنایا جیسے گاڑی کو کچھ زیادہ دور پارک کرنے لگی یا اسکول کے اندر زیادہ چہل قدمی کرنے لگیں۔

View this post on Instagram

In a world filled to the brim with judgement, why would I choose to live life out loud? Doing so has allowed me to not simply live, but to thrive! In the beginning, it was for me. Living out loud provided accountability. I had so many “day 1’s” that I can’t fathom trying to count them. This last time it was different! It did take me losing 100 pounds, and a guiding nudge, to begin talking about my journey openly. What if I failed? What if it didn’t stick? What if I did it, but then gained it back? Get rid of those “what if’s”! You’re only holding yourself back. As afraid as I was, I slowly began sharing more. The next thing you know, the most beautiful thing happened. Community! People I followed helped me in the beginning, and now I get to do that for others. I don’t wish being 500+ pounds on anyone, but now having escaped morbid obesity I can use what once caused so much pain and anxiety in my life as a key to unlock other people’s prisons. Living life out loud is still so new to me, and still makes me nervous. But I’m ever so thankful for each of you. Your support, your sharing, and your willingness to band together to help each other. Social media doesn’t have to be a negative space. Make it work for you! Find your tribe, and love them hard. Life’s a party! 🎉🎉🎉 —————————————————————— #exercise #progressnotperfection #family #lol #motivation #girlswholift #goals #transformation #weightlossmotivation #celebration #health #weightlosstransformation #fitfam #follow #life #inspiration #christmas #BeforeAndAfter #puns #weightlossjourney #weightlosscommunity #igaccountability #fattofit #determined #transformationtuesday #effyourbeautystandards #smile #ootd

A post shared by Brittany May (@miss_itty_britty) on

اس طرح بتدریج انہوں نے جم جانا شرع کرکے وہاں کارڈیو ورزشیں کرنا شروع کیں جبکہ پھر اسے دیگر ورک آﺅٹ میں بدل دیا۔

2 سال کے اندر اتنا زیادہ وزن کم کرنے نتیجے میں ان کے جسم کی کھال کافی زیادہ لٹک گئی تھی جس کے نجات کے لیے انہوں نے رواں سال جنوری میں سرجری کے ذریعے اسے نکلوایا اور اس کھال کا وزن ہی 5 کلو سے زیادہ تھا۔