جنوبی وزیرستان: گاؤں میں بجلی کا پہلا منصوبہ، 100 روپے فی گھر!

اپ ڈیٹ 10 ستمبر 2018

ای میل

پاک فوج کے اہلکاروں جنوبی وزیرستان کے گاؤں گیگا خیل میں ہائیڈل پاور منصوبے کا افتتاح کیا—فوٹو: سراج الدین
پاک فوج کے اہلکاروں جنوبی وزیرستان کے گاؤں گیگا خیل میں ہائیڈل پاور منصوبے کا افتتاح کیا—فوٹو: سراج الدین

پشاور: عسکریت پسندی سے بری طرح متاثر ہونے والے قبائلی علاقے جنوبی وزیرستان میں دہشت گردی کے خلاف آپریشن کے بعد اب زندگی معمول پر آنا شروع ہوگئی۔

جس کے بعد تاریخ میں پہلی مرتبہ دور دراز قبائلی گاؤں کے رہائشی بھی زندگی کی بنیادی سہولیات سے فائدہ اٹھا سکیں گے۔

واضح رہے کہ پاک فوج کی جانب سے عارضی طور پر بے گھر ہوئے افراد کو واپسی پر بنیادی سہولیات فراہم کی جارہی ہیں اور اسی سلسلے میں افغانستان کی سرحد کے قریب واقع گاؤں گیگا خیل میں مائیکرو ہائیڈل پاور پلانٹ کا افتتاح کیا گیا۔

یہ بھی پڑھیں: جنوبی وزیرستان: ’عسکریت پسندوں‘ کی درجنوں دکانیں مسمار

پاور پلانٹ کے افتتاح کے موقع پر مقامی افراد کی بڑی تعداد بھی موجود تھی اس حوالے سے ایک مقامی عمائد کا کہنا تھا کہ ’آج ہم بہت خوش ہیں کیوں کہ پہلی بار ہمیں بجلی کی سہولت ملنے والی ہے‘۔

.ہائیڈل پاور پلانٹ منصوبےکے افتتاح کے موقع پر تقریب میں مقامی افراد نے بھی شرکت کی۔
.ہائیڈل پاور پلانٹ منصوبےکے افتتاح کے موقع پر تقریب میں مقامی افراد نے بھی شرکت کی۔

اسی بارے میں گفتگو کرتے ہوئے مقامی مِلک نے بتایا کہ ’آپ اندازہ نہیں کرسکتے کہ بجلی کے بغیر زندگی کس قدر مشکل ہے اور ابھی تک ہمیں یہ سہولت میسر نہیں تھی لیکن اب قبائلی عوام کو بھی بنیادی سہولیات حاصل ہوں گی جس سے قبائلی عوام میں احساسِ محرومی کا خاتمہ ہوگا۔

اس ضمن میں ایک فوجی عہدیدار نے بتایا کہ چھوٹا پاور پلانٹ اور ایک پن چکی ایک ہزار 7 سو 50 فیٹ طویل پانی کی نہر پر نصب کی گئی ہے جبکہ اس منصوبے سے توانائی پیدا کرنے کی صلاحیت 15 کلو واٹ ہے جس سے 100 گھروں کو بجلی فراہم کی جائے گی۔

مزید پڑھیں: جنوبی وزیرستان: 'دہشتگردوں' کا حملہ، 3 اہلکار ہلاک

عہدیدار کا مزید کہنا تھا کہ بجلی کی قیمت کے طور پر فی گھر 100 روپے وصول کیے جائیں گے اور یہ رقم پاور ہائیڈل پلانٹ کی دیکھ بھال پر خرچ کی جائے گی۔

حکام کا کہنا تھا کہ اس طرح کے منصوبے دیگر دیہاتوں میں بھی شروع کیے جائیں گے، اس موقع پر موجود افراد نے قبائلی علاقے میں قیامِ امن کے لیے حکومتی کاوشوں کو سراہا۔

گیگا خیل کے ایک مقامی رہائشی نے ڈان سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ اب ہمارے گاؤں میں مکمل طور پر امن قائم ہوگیا ہے۔