ایک ماہ میں گیس کی قیمتوں میں دوسری مرتبہ اضافہ

ای میل

— فائل فوٹو / ڈان نیوز
— فائل فوٹو / ڈان نیوز

آئل اینڈ گیس ریگولیٹری اتھارٹی (اوگرا) نے سرکاری دفاتر، ہسپتالوں، تعلیمی اداروں سمیت کمرشل صارفین کے لیے گیس کی قیمتوں میں ایک ماہ کے دوران دوسری مرتبہ اضافہ کردیا۔

قیمتوں میں اضافے کے نوٹیفکیشن کے مطابق رہائشی کالونیز، کیپٹو پاور پلانٹ، فلاحی اداروں، سرکاری دفاتر، ہسپتالوں، مسلح افواج کے میس، یونیورسٹیز، کالجز، اسکولوں اور نجی تعلیمی اداروں کے لیے ماہانہ گیس فکسڈ چارجز میں 3 ہزار 6 سو روپے کا اضافہ کردیا گیا۔

ان تمام اداروں کے صارفین کے لیے گیس کے ماہانا فکسڈ چارجز ایک ہزار 53 روپے سے بڑھا کر 4 ہزار 680 روپے کیے گئے ہیں۔

اس کے ساتھ ہی کمرشل صارفین، کیفے، بیکریز، ملک شاپ، کینٹین، ہوٹلز، تجارتی مالز کے لیے بھی گیس مہنگی کردی گئی۔

مزید پڑھیں : گیس کے نرخوں میں 10 سے 143 فیصد تک اضافہ

کمرشل صارفین اور آئس فیکٹریوں کے لیے ماہانہ گیس فکسڈ چارجز ایک ہزار 2 سو 25 روپے اضافے کے بعد 5 ہزار 8 سو 80 روپے مقرر کردئیے گئے۔

اوگرا کی جانب سے گیس کی قیمتوں میں ترمیمی بل کا اطلاق فوری طور پر کردیا گیا۔

خیال رہے کہ حکومت نے رواں ماہ 4 اکتوبر کو گھریلو، کمرشل اور صنعتی صارفین کے لیے گیس کے نرخوں میں 10 سے ایک سو 43 فیصد تک اضافہ کیا تھا۔

گیس کے نرخوں میں گزشتہ 4 سال کے دوران کسی قسم کا اضافہ نہیں کیا گیا تھا لیکن وزیر خزانہ اسد عمر کی زیر صدارت اقتصادی رابطہ کمیٹی کے اجلاس کے بعد 17 ستمبر کو گیس کے نرخوں میں اضافے کی منظوری دی گئی تھی۔

اوگرا نے گیس کی قیمتوں کے سلیب 3 سے بڑھاکر 7 کردیے تھے اور کمرشل صارفین کے لیے گیس کی قیمتوں میں 57 فیصد تک اضافہ کیا گیا تھا۔

قیمتوں میں اضافے کے بعد سی این جی کے نرخوں میں 40 فیصد اضافہ کیا گیا۔

حکومت کا عوام دشمن اقدام، مریم اورنگزیب

پاکستان مسلم لیگ (ن) کی ترجمان مریم اورنگزیب نے گیس کی قیمتوں میں مزید اضافے کی مذمت کرتے ہوئے اسے عوام دشمن حکومت کا ایک اور عوام دشمن اقدام قرار دیا۔

ترجمان مسلم لیگ (ن) کا کہنا تھا کہ عوام دشمن حکومت نے عوام پر مہنگائی کا ایک اور بم گرایا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ حکومت نے جب سے اقتدار سنبھالا ہے عوام نے سکون کا سانس نہیں لیا۔

مسلم لیگ (ن) کی رہنما کا کہنا تھا کہ حکومت کی جانب سے گیس مزید مہنگی کردینے سے صنعتی، کاروباری اور تجارتی حلقوں میں روزگار کا قتلِ عام کیا جارہا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: پہلی مرتبہ سی این جی کی قیمت 100 روپے فی کلو سے تجاوز کرگئی

مریم اورنگزیب نے مزید کہا کہ حکومت اپنی نااہلی کا بوجھ غریب عوام پر ڈال رہی ہے، ظلم بند نہ ہوا تو مہنگائی کی ستائی عوام سڑکوں پر ہو گی۔

انہوں نے مزید کہا کہ جس دن حکومت چور چور اور ڈاکو ڈاکو کا زیادہ شور مچائے اُس دن غریب کے گھر بڑے ڈاکے کی تیاری ہوتی ہے۔

مسلم لیگ (ن) کی رہنما کا کہنا تھا کہ عوام دشمن حکومت کی 60روزہ مجموعی کارکردگی الزامات، جھوٹ اور مہنگائی کی شرح کو تاریخ کی بلند ترین سطح پر لے جانا ہے۔

مزید پڑھیں : ایم کیو ایم کی سی این جی قیمتوں پر تنقید، حکومت کیلئے خطرے کی گھنٹی

انہوں نے مزید کہا کہ 60 دن کے سونامی کا یہ عالم ہے تو مزید 40دن کے لیے عوام اپنے حفاظتی بند باندھ لیں، ملک میں تبدیلی کے نام پر تباہی آرہی ہے۔

قیمتوں میں اضافہ واپس لیا جائے، سینیٹر آصف کرمانی

سوئی گیس کی قیمتوں میں اضافے پر سینیٹر آصف کرمانی کا کہنا تھا کہ قیمتوں میں اضافہ عوام پر ظلم ہے، اسے فوری طور پر واپس لیا جائے۔

آصف کرمانی کا کہنا تھا کہ حکومت عوام کو پتھر کے زمانے میں دھکیل رہی ہے، عوام سوئی گیس اور بجلی کے بھاری بل ادا نہیں کر پائیں گے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ گیس کی قیمتوں میں اضافے کے بعد کیا عوام اب لکڑیاں جلا کر اپنی ضرورت پوری کریں؟