ہنزہ میں پلاسٹک بیگ کے استعمال پر پابندی

16 اپريل 2019

ای میل

پلاسٹک بیگ ماحول کے ساتھ ساتھ انسانی صحت کے لیے بھی نقصان دہ ہیں — فوٹو:شٹر اسٹاف
پلاسٹک بیگ ماحول کے ساتھ ساتھ انسانی صحت کے لیے بھی نقصان دہ ہیں — فوٹو:شٹر اسٹاف

گلگت: ماحولیاتی آلودگی کو روکنے کے پیش نظر ہنزہ میں پلاسٹک شاپنگ بیگ کے استعمال پر پابندی عائد کردی گئی۔

ہنزہ کی ضلعی انتظامیہ کی جانب سے جاری نوٹس کے مطابق گلگت بلتستان ماحولیاتی تحفظ ایجنسی (جی بی ای پی اے) اور ہنزہ ڈسٹرکٹ ایڈمنسٹریشن کی جانب سے ضلع میں پلاسٹک کی تھیلیوں کے استعمال پر پابندی عائد کرنے کا فیصلہ کرلیا گیا۔

مزید پڑھیں: پلاسٹک کے تھیلوں کا استعمال ترک کرنے کے منصوبے کا اعلان

نوٹس کے مطابق یہ فیصلہ پلاسٹک کی تھیلیوں کے استعمال سے ماحول اور انسانی صحت پر پڑنے والے اثرات کی روشنی میں لیا گیا۔

اس نوٹس میں دکانداروں اور پلاسٹک بیگ کا کام کرنے والے افراد کو متبنہ کیا گیا کہ وہ اس طرح کے بیگ کا پہلے سے موجود اسٹاک 20 اپریل تک ختم کردیں، اس تاریخ کے بعد بیگ کو بنانے، فروخت کرنے، خریدنے والے اور اس کا استعمال جرم تصور کیا جائے گا۔

ضلعی انتظامیہ کی جانب سے شہریوں اور تاجر برادری کو مشورہ دیا گیا کہ وہ کاغذ اور کپڑے سے بنے بیگ کا استعمال کریں۔

یہ بھی پڑھیں: سندھ میں پلاسٹک بیگس پر پابندی لگانے کا فیصلہ

دوسری جانب ضلعی انتظامیہ نے اس سلسلے میں آگاہی مہم بھی شروع کردی، جس میں مختلف مقامات پر ’پلاسٹک کے تھیلوں کو نہ کہیں، آنے والی نسل کے مستقبل محفوظ کرنے کے لیے پلاسٹک بیگ کا استعمال نہ کریں‘، جیسے پیغام کے نوٹس آویزاں کیے گئے ہیں۔

علاوہ ازیں گلگت بلتستان کے سیکریٹری محمد خرم آغا نے ضلع گانچھے میں خرفق آبپاشی اور زمینی ترقی (آئی ایل ڈی) منصوبے کا افتاح بھی کیا۔


یہ خبر 16 اپریل 2019 کو ڈان اخبار میں شائع ہوئی