امریکی پابندیاں، بھارت نے بھی ایران سے تیل کی درآمد بند کردی

24 مئ 2019

ای میل

بھارتی ضرورت کا 10 فیصد ایرانی تیل سے پورا ہوتا ہے—فائل فوٹو: ڈان نیوز
بھارتی ضرورت کا 10 فیصد ایرانی تیل سے پورا ہوتا ہے—فائل فوٹو: ڈان نیوز

بھارت نے امریکا سے اپنے سیاسی تعلقات کی بنیاد پر ایران سے تیل کی تمام درآمد روک دی۔

خبررساں اداے ’اےایف پی‘ کے مطابق واشنگٹن میں بھارتی سفارتکار نے بتایا کہ نئی دہلی نے باقاعدہ طور پر تہران سے تیل کی تمام درآمد روک دی ہے۔

خیال رہے کہ بھارت پہلے ہی ایرانی تیل کی درآمد میں غیرمعمولی کمی لاچکا تھا اور اپریل میں درآمد حجم صرف 10 لاکھ ٹن تک محدود ہو کر رہ گیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں: ایران پر امریکی پابندیاں ‘معاشی دہشت گردی’ ہے، حسن روحانی

واشنگٹن میں بھارتی سفیر ہرش ورڈن شیرنگلا نے کہا کہ امریکا نے گزشتہ ایران پر دباؤ بڑھایا اور تمام پابندیوں پر چھوٹ ختم کردی۔

صحافیوں کو وزیراعظم نریندر مودی کی انتخابات میں کامیابی سے متعلق پریس کانفرنس میں انہوں نے کہا کہ ’بس اس کے بعد ہم نے ایران سے تیل درآمد نہیں کیا‘۔

انہوں نے واضح کیا کہ ’ہم نے وینزویلا سے بھی تیل کی تمام درآمد معطل کردی کیونکہ ہم خود کو امریکا کا پارٹنرسمجھتے ہیں‘۔

ان کا کہنا تھا کہ مذکورہ فیصلوں سے بھارت کو پریشانی کا سامنا ہے کیونکہ بھارتی ضرورت کا 10 فیصد ایرانی تیل سے پورا ہوتا تھا۔

مزیدپڑھیں: امریکا نے ایران کے ساتھ 4 دہائی پرانا سفارتی معاہدہ منسوخ کردیا

واشنگٹن میں بھارتی سفارتکار نے کہا کہ ’ایران اور امریکا کے مابین تنازع کا حل نکلنا چاہیے تاہم ہم صرف ایک تھرڈ پارٹی کے طور پر صورتحال کا جائزہ لے رہے ہیں۔

خیال رہے کہ امریکا کی جانب سے ایران کے ساتھ جوہری معاہدہ ختم کرنے کے بعد دونوں ممالک کے مابین کشدیدگی بڑھ گئی ہے اور واشنگٹن نے خلیج فارس میں بحری جنگی بیڑا اور بی 52 بمبار تعینات کردیئے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ’بحری جنگی بیڑا اور بی 52 بمبار کی تعیناتی کسی واقعے کا آغاز ہوسکتا ہے خاص طور پر ایسے وقت میں جب کچھ لوگ جنگ کے خواہاں ہیں‘۔