ویرات کوہلی کا نیا عالمی ریکارڈ، دہائی کے بہترین بلے باز بن گئے

اپ ڈیٹ 15 اگست 2019

ای میل

ویرات کوہلی نے ویسٹ انڈیز کے خلاف لگاتار دو ون ڈے میچوں میں سنچریاں اسکور کیں— فوٹو: اے ایف پی
ویرات کوہلی نے ویسٹ انڈیز کے خلاف لگاتار دو ون ڈے میچوں میں سنچریاں اسکور کیں— فوٹو: اے ایف پی

بھارتی کپتان اور مایہ ناز بلے باز ویرات کوہلی نے نیا عالمی ریکارڈ قائم کر دیا اور وہ ایک دہائی کے دوران سب سے زیادہ رنز اور سنچریاں بنانے والے بلے باز بن گئے ہیں۔

ایک دہائی کے دوران سب سے زیادہ رنز بنانے کا اعزاز اس سے قبل آسٹریلین بلے باز اور سابق کپتان وکی پونٹنگ کے پاس تھا جبکہ اس سے قبل سچن ٹنڈولکر اس اعزاز کے مالک تھے۔

1990 کی دہائی میں سچن ٹنڈولکر نے 8ہزار571 رنز بنا کر عالمی ریکارڈ قائم کیا تھا جس میں 24سنچریاں اور 44 نصف سنچریاں شامل تھیں۔

عظیم بھارتی بلے باز نے 2000 کی دہائی کے دوران بھی بہترین کھیل کا سلسلہ جاری رکھا اور 21 سنچریوں اور 49نصف سنچریوں کی مدد سے 8ہزار 823 رنز بنائے۔

تاہم اس دہائی کے دوران رکی پونٹنگ نے انہیں اس ریکارڈ سے محروم کردیا اور 23 سنچریوں اور 56 نصف سنچریوں کی بدولت 9ہزار 103 رنز بنائے۔

البتہ ابتدائی طور پر ناکامیوں کے بعد ویرات کوہلی نے اپنے شاندار کھیل اور بہترین فٹنس کی بدولت یہ ریکارڈ اپنے نام کر لیا جبکہ اس دہائی کے خاتمے میں ابھی بھی 4 ماہ کا عرصہ باقی ہے۔

کوہلی نے گزشتہ 10سال کے دوران 11ہزار 36رنز بنائے جس میں 42 سنچریاں اور 51 نصف سنچریاں شامل ہیں۔

بھارتی ٹیم کے کپتان اب تک 239 ون ڈے میچوں میں 60.31 کی اوسط کے ساتھ ساتھ 43 سنچریوں اور 15 نصف سنچریوں کی بدولت 12ہزار 359 رنز بنا چکے ہیں اور ان کی موجودہ فارم کو دیکھتے ہوئے یہ کہنا غلط نہیں ہو گا کہ وہ ون ڈے کرکٹ کے تمام تر اہم ریکارڈز اپنے نام کر لیں گے۔