عمران خان کے وعدوں کی مانیٹرنگ کیلئے ’خان میٹر‘ متعارف

اپ ڈیٹ 23 اگست 2018

ای میل

کراچی: وزیراعظم عمران خان کی جانب سے ’نیا پاکستان‘ میں کڑے احتساب کے دعووں کے ساتھ ہی دبئی کے ایک تاجر نے ’خان میٹر‘ کے نام سے ویب سائٹ متعارف کرادی۔

ڈان اخبار میں شائع رپورٹ کے مطابق سلمان سعید نامی تاجر نے بتایا کہ ’ویب سائٹ پر عمران خان کی 100 دن میں اپنے وعدوں سے متعلق کارکردگی کا ریکارڈ مرتب کیا جا سکے گا‘۔

یہ بھی پڑھیں: وزیراعظم عمران خان چھٹی کے دن بھی کام پر!

ان کا کہنا تھا کہ ویب سائٹ نئی حکومت کی کارکردگی رپورٹ تیار کرے گی اور اس پر مختلف کیٹیگری مثلاً گورننس، فیڈریشن، اقتصادیات، زراعت، پانی، سوسائٹی اور سیکیورٹی موجود ہیں جہاں پر ہونے والی پیش رفت کی تفصیلات شامل ہوں گی۔

ڈان نیوز سے بات کرتے ہوئے انہوں نے بتایا کہ ’کارکردگی کی چانچ پڑتال سے متعلق سائٹ کی تشکیل بہت پہلے ہونی چاہیے تھی تاکہ حکومت کا احتساب کیا اور ان کی کارکردگی ان کے دعووں کے تناظر میں دیکھی جاسکے‘۔

اس حوالے سے بتایا گیا کہ وزیراعظم عمران خان کے 100 دن پر مشتمل ایجنڈے سے متعلق کیٹیگریز ہیں جن میں پولیس کا غیر سیاسی ہونا، کراچی کی ترقی، نوجوانوں کو نوکری کی فراہمی ، سیاحت کا فروغ، واٹر پالیسی، سول ریفارمز اور دیگر مسائل شامل ہیں۔

ویب سائٹ پر 35 وعدوں کی فہرست موجود ہے جس میں سے سول سروس ریفارمز اور جنوبی پنجاب سے اعلیٰ عہدے پر تعیناتی پر عملدرآمد ’فعال‘ کی صورت میں دیکھا جا سکتا ہے۔

مزید پڑھیں: عمران خان کا محسود قبیلے کے مطالبات آرمی چیف تک پہنچانے کا وعدہ

اس حوالے سے سلمان سعید نے بتایا کہ اگر عمران خان کے کسی بھی وعدے پر بات چیت شروع ہوتی ہے تو اس کیٹیگری کا اسٹیٹس ’کام جاری ہے‘ ہوجائے گا، اگر اس ضمن میں کوئی قانون سازی ہوتی ہے تو اس کا اسٹیٹس ’کامیابی‘ کی صورت میں واضح ہو جائے گا۔

سلمان سعید نے اپنی ویب سائٹ پر تحریر کیا کہ ’ویب سائٹ پر سول ریفارمز کی کیٹیگری میں اس وقت تبدیلی لائی گئی جب وزیراعظم عمران خان نے ڈاکٹر عشرت حسین کی نگرانی میں ٹیم تشکیل دی‘۔

ویب سائٹ کی غیر جانبداری سے متعلق سوال پر انہوں نے بتایا کہ ہر کیٹیگری میں مباحثے کی گنجائش موجود ہے ، لوگ اس خاص فہرست سے متعلق اپنی رائے دے سکتے ہیں اور کارکردگی سے متعلق نیوز ایک قابل اعتماد ذریعہ ہے‘۔

اس ضمن میں وکیپیڈیا صفحات کے پاکستانی ایڈیٹر ثاقب قیوم نے نئی حکومت کے اقدامات کا ریکارڈ مرتب کررہے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: وزیراعظم عمران خان کے پہلے خطاب پر ٹوئٹر صارفین کی ستائش

ڈان سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ ’وکیپیڈیا انٹرنیٹ پر بہت پڑھی جانی والی ویب سائٹ ہے، اگر کسی کی زندگی کے بارے میں کچھ پڑھنا ہوتا تو لوگ وکیپیڈیا کا رخ کرتے ہیں، کوئی بھی واقعہ یا شخصیت وقت کے ساتھ منظر عام سے غائب ہو جاتی ہے لیکن وکیپیڈیا پر اس سے متعلق تفصیلات اپ ڈیٹ ہو رہی ہوتی ہیں‘۔

انہوں نے بتایا کہ وہ نئی حکومت میں تمام شامل صوبائی اور وفاقی وزرا کے 500 صفحات تشکیل دے چکے ہیں جن میں ان کے سیاسی سفر کی تفصیلات شامل ہونے کے ساتھ سیاسی کارکردگی کاریکارڈ بھی شامل ہے، خصوصاً کرپشن کیسز کے بارے میں قدرے فصاحت سے ہے۔