انسٹاگرام لائیکس چھپانے کے فیچر کی دیگر ممالک تک توسیع

18 جولائ 2019

ای میل

اس فیچر کی آزمائش پہلے کینیڈا میں ہورہی تھی — اے ایف پی فوٹو
اس فیچر کی آزمائش پہلے کینیڈا میں ہورہی تھی — اے ایف پی فوٹو

انسٹاگرام میں ایک ایسی بڑی تبدیلی آنے والی ہے جو اس کے استعمال کا انداز بدل کر رکھ دے گی۔

فیس بک کی زیرملکیت فوٹو شیئرنگ اپلیکشن میں اب ایک بڑی تبدیلی کی آزمائش ہورہی ہے جس کے تحت پوسٹس پر لائیکس کی تعداد کسی اور کو نظر نہیں آئے گی۔

انسٹاگرام کے اس فیچر کی آزمائش رواں سال اپریل سے کینیڈا میں ہورہی تھی اور دیکھا جارہا تھا کہ کسی پوسٹ پر لائیکس کی تعداد چھپانا صارفین کو کس حد تک فائدہ پہنچاتا ہے۔

فیس بک کی زیرملکیت فوٹو شیئرنگ ایپ نے اس کے نتائج تو جاری نہیں کیے مگر اس فیچر کو چند دیگر ممالک تک توسیع دینے کا اعلان کیا ہے۔

انسٹاگرام کی جانب سے کیے گئے ایک ٹوئیٹ کے مطابق کینیڈا کے ساتھ ساتھ اب آسٹریلیا، برازیل، آئرلینڈ، اٹلی، جاپان اور نیوزی لینڈ میں منتخب صارفین لائیکس اور ویڈیو ویوز کو دیگر سے چھپا سکیں گے۔

منتخب صارفین کو ایک بینر نظر آئے گا جس میں انہیں ٹیسٹ کے بارے میں بتایا جائے گا اور اس پر لکھا ہوگا 'ہم چاہتے ہیں کہ آپ کے فالورز اس پر توجہ دیں کہ آپ کیا شیئر کررہے ہیں، اس پر نہیں کہ آپ کی پوسٹس پر کتنے لائیکس ہوتے ہیں'۔

ایک اور ٹوئیٹ میں انسٹاگرام نے لکھا 'ہم چاہتے ہیں کہ ہمارے دوست آپ کی شیئر کی گئی تصاویر اور ویڈیوز پر توجہ دیں، اس پر نہیں کہ ان پر کتنے لائیکس ہیں، آپ ضرور لائیک کیے گئے افراد کی فہرست دیکھ سکیں گے، مگر آپ کے دوست نہیں دیکھ سکیں گے کہ آپ کی پوسٹ کو کتنے لائیک کیا'۔

فالوروز کو بس یہ لکھا نظر آئے گا کہ ' Liked by [user] and others ' ۔

اس فیچر کی آزمائش زیادہ ممالک میں کیے جانے کے بعد توقع ہے کہ اس فیچر کو بہت جلد تمام صارفین کے لیے متعارف کرایا جاسکتا ہے۔

کمپنی کو توقع ہے کہ اس فیچر کی بدولت صارفین کو اپنی پوسٹس کا دیگر سے موازنہ کرنے کے بوجھ سے نجات مل جائے گی اور ان کے رویے پر اس کے خوشگوار اثرات مرتب ہوں گے۔

اس سے قبل ٹوئٹر کے سی ای او جیک ڈورسے نے بھی لائیک بٹن کو ختم کرنے کی خواہش کا اظہار کیا تھا۔

ان کا کہنا تھا کہ اس فیچر کو ختم کرنے سے صارفین پر فالورز اور لائیکس کا دباﺅ ختم ہوجائے گا۔