جسٹس شیخ عظمت سعید نے قائم مقام چیف جسٹس کے عہدے کا حلف اٹھالیا

30 جولائ 2019

ای میل

جسٹس عمر عطا بندیال نے جسٹس شیخ عظمت سعید سے قائم مقام چیف جسٹس کا حلف لیا—فوٹو: سپریم کورٹ
جسٹس عمر عطا بندیال نے جسٹس شیخ عظمت سعید سے قائم مقام چیف جسٹس کا حلف لیا—فوٹو: سپریم کورٹ

سپریم کورٹ کے جسٹس شیخ عظمت سعید نے قائم مقام چیف جسٹس سپریم کورٹ آف پاکستان کے عہدے کا حلف اٹھالیا۔

حلف برداری کی تقریب اسلام آباد میں منعقد ہوئی، جہاں سپریم کورٹ کے ججز اور اعلیٰ حکام نے شرکت کی۔

عدالت عظمیٰ کے جسٹس عمر عطا بندیال نے جسٹس شیخ عظمت سعید سے قائم مقام چیف جسٹس کا حلف لیا۔

مزید پڑھیں: جسٹس گلزار احمد نے قائم مقام چیف جسٹس کے عہدے کا حلف اٹھالیا

خیال رہے کہ چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ اور جسٹس گلزار احمد کے روس کے سرکاری دورے پر جانے کے باعث قائم مقام چیف جسٹس کے طور پر جسٹس شیخ عظمت سعید تمام امور دیکھیں گے۔

چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ اور جسٹس گلزار احمد 10ویں عالمی جوڈیشل کانفرنس میں شرکت کریں گے جہاں وہ پاکستان کی نمائندگی کریں گے۔

یہ کانفرنس روس کے دارالحکومت ماسکو میں 31 جولائی سے 3 اگست تک جاری رہے گی اور اس میں شرکت کے لیے روس کے فیڈرل بیلف سروس کے سربراہ نے چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ کو دعوت دی تھی۔

اس سے قبل مئی میں چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ کے 7 روزہ سرکاری دورہ روس کے موقع پر جسٹس گلزار احمد نے قائم مقام چیف جسٹس کے عہدے کا حلف لیا تھا۔

خیال رہے کہ ملک میں چیف جسٹس پاکستان کی غیرموجودگی میں سپریم کورٹ آف پاکستان کے سینئر ترین جج قائم مقام چیف جسٹس کے فرائض انجام دیتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: سپریم کورٹ کے موجودہ 8 ججز چیف جسٹس بنیں گے

واضح رہے کہ سپریم کورٹ میں چیف جسٹس سمیت 17 ججز صاحبان ہیں، جن میں سے 8 کو چیف جسٹس کا عہدہ سنبھالنے کا موقع ملے گا تاہم 8 ججز صاحبان یہ اہم ترین عہدہ ملنے سے قبل ہی ریٹائر ہوجائیں گے۔

17 جنوری 2019 کو چیف جسٹس میاں ثاقب نثار کے ریٹائر ہونے کے بعد 18 جنوری کو جسٹس آصف سعید خان کھوسہ نے چیف جسٹس کا عہدہ سنبھالا تھا اور وہ اسی سال 20 دسمبر کو ریٹائر ہوجائیں گے۔

ان کے بعد جسٹس گلزار احمد اس عہدے پر فائز ہوں گے اور وہ یکم فروری 2022 تک چیف جسٹس کے عہدہ سے ریٹائر ہوجائیں گے۔