'شوبز انڈسٹری میں شادیاں ٹوٹنے کی بڑی وجہ جھوٹ'

ای میل

صنم ماروی کی یہ دوسری شادی ہے — فوٹو: فیس بک
صنم ماروی کی یہ دوسری شادی ہے — فوٹو: فیس بک

پاکستان کی نامور گلوکارہ صنم ماروی نے شوہر حامد علی سے خلع لینے کے لیے رواں ماہ کے آغاز میں عدالت میں درخواست دائر کی تھی اور اب انہوں نے اپنا بیان بھی ریکارڈ کروا دیا۔

جج ثناء افضل واہلہ کی عدالت میں دوران سماعت صنم ماروی نے اپنا بیان ریکارڈ کروایا اور کہا کہ شوبز انڈسٹری میں شادیاں ٹوٹنے کی بڑی وجہ جھوٹ ہے۔

صنم ماروی کا کہنا تھا کہ وہ اپنے شوہر کے ساتھ مزید رہنا نہیں چاہتی۔

مزید پڑھیں: گلوکارہ صنم ماروی نے خلع کے لیے عدالت سے رجوع کرلیا

انہوں نے عدالت سے درخواست کی کہ خلع کی ڈگری جاری کی جائے جس کے بعد عدالت نے اپنا فیصلہ محفوظ کرلیا۔

یاد رہے کہ صنم ماروی نے 7 فروری کو اپنے شوہر حامد خان سے خلع کے لیے لاہور کی فیملی کورٹ میں اپنے وکیل کے توسط سے درخواست دائر کی تھی۔

گلوکارہ نے اپنی درخواست میں الزام عائد کیا تھا کہ شوہر ان پر تشدد کرنے سمیت ان کے خلاف نازیبا زبان بھی استعمال کرتے ہیں اور وہ شوہر کے ایسے رویے کو برداشت کرکے تھک گئی ہیں۔

صنم ماروی کی جانب سے دائر کی گئی درخواست میں کہا گیا تھا کہ ان دونوں کی شادی مکمل اسلامی روایات کے مطابق ہوئی اور جوڑے کے 3 بچے بھی ہیں جن کی وجہ سے گلوکارہ شوہر کا تشدد برداشت کرتی رہیں۔

جس کے بعد حامد خان نے عدالت میں سات صفحات پر مشتمل اپنا جواب جمع کروا دیا تھا۔

حامد خان کا کہنا تھا کہ انہوں نے صنم ماروی سے کبھی بدتمیزی نہیں کی اور نہ ہی کبھی انہیں گالی دی ہے۔

اپنے جواب میں انہوں نے مؤقف اختیار کیا تھا کہ وہ اہلیہ اور بچوں کو باقاعدگی سے خرچ ادا کرتے ہیں۔

حامد خان نے عدالت سے درخواست کی تھی کہ ان کی اہلیہ کی خلع کی درخواست کو مسترد کیا جائے۔

خیال رہے کہ صنم ماروی کی یہ دوسری شادی ہے، ان کے پہلے شوہر آفتاب احمد کو 2009 میں سندھ کے دارالحکومت کراچی میں قتل کردیا گیا تھا۔

صنم ماروی کو شہرت کوک اسٹوڈیو سیزن 4 سے ملی تھی جس کے بعد انہوں نے ٹی وی اور ریڈیو سمیت لائیو پرفارمنس میں بھی اپنا نام بنایا۔

صنم ماروی نے گلوکاری کا آغاز پاکستان ٹیلی وژن (پی ٹی وی) لاہور سے دوسری شادی کے بعد کیا تھا۔