گوگل کا جی میل میں بڑی تبدیلیوں کا اعلان

16 جولائ 2020

ای میل

— فوٹو بشکریہ گوگل
— فوٹو بشکریہ گوگل

گوگل نے اپنی مقبول ترین سروس جی میل ری ڈیزائن کرنے کا اعلان کیا ہے جس کا مقصد اسے سلیک اور مائیکرو سافٹ ٹیمز کے مقابلے پر لانا ہے۔

اس ری ڈیزائن کے بعد ای میل ای میل سروس کے ساتھ ساتھ دفتری ساتھیوں سے چیٹ اور دیگر کاموں میں مدد فراہم کرسکے گی۔

اس مقصد کے لیے گوگل کی دیگر سروسز جیسے گوگل ڈاکس، ڈرائیو اور کلینڈر کو ایک ہی جگہ اکٹھا کیا جائے گا جبکہ نئے جی میل ڈیزائن میں صارف کے سامےن 4 ٹیبز ہوں گے جن میں میل، چیٹ، میٹ فار ویڈیو کالنگ اور رومز شامل ہوں گے۔

جی میل کا یہ نیا فیچر رومز سلیک رومز سے ملتا جلتا ہے، جہاں ایک دفتر کے لوگ رئیل ٹائم میں اکٹھے کام کرسکیں گے۔

گوگل کے ورژن میں لوگ چیٹ، فائل سوائپ اور گوگل ڈاکس کو ٹیبز سوئچ کیے بغیر ایڈٹ کرسکیں گے۔

جی میل میں یہ بڑی تبدیلیاں اس وقت کی جارہی ہیں جب دنیا بھر میں کاروباری ادارے کورونا وائرس کی وبا کے باعث گھروں سے کام پر توجہ دے رہی ہیں۔

کمپنیاں اپنے دفاتر بند کرکے مختلف سافٹ ویئر پر انحصار کررہی ہیں تاکہ ملازمین گھروں میں رہ کر بھی اکٹھے کام کرسکیں۔

گوگل نے اپریل میں جی میل میں میٹ بٹن کا اضافہ کیا تھا تاکہ لوگ ویڈیو کانفرنس سروس کو مفت استعمال کرسکیں گے اور ایسا کرنے سے صرف اپریل میں روزانہ 30 لاکھ نئے صارفین اس سروس کا حصہ بنے۔

جی میل میں اپ ڈیٹ کے بعد چند دیگر فیچر جیسے اسنوزنگ نوٹیفکیشنز، اسائننگ ٹاسکس اور ڈو ناٹ ڈسٹرب فلٹر بھی متعارف کراجئے جائیں گے۔

فی الحال گوگل کی جانب سے ری ڈیزائن کو چند کمپنیوں میں آزمایا گیا اور اب اس سروس کو اگلے ماہ متعارف کرانے کا فیصلہ کیا ہے۔