اسلام آباد میں ایک مرتبہ پھر دفعہ 144 نافذ

اپ ڈیٹ 15 جنوری 2020

ای میل

اسلام آباد میں پہاڑوں کی کھدائی پر پابندی عائد کردی گئی—فائل فوٹو: ڈان نیوز
اسلام آباد میں پہاڑوں کی کھدائی پر پابندی عائد کردی گئی—فائل فوٹو: ڈان نیوز

اسلام آباد کیپیٹل ٹیریٹری (آئی سی ٹی) کے ضلعی مجسٹریٹ نے شہر میں مختلف پابندیاں عائد کرتے ہوئے دفعہ 144 کے نفاذ کا نوٹی فکیشن جاری کردیا۔

ضلعی انتظامیہ کی جانب سے جاری نوٹیفکیشن کے مطابق ہاؤسنگ سوسائٹیز کی جانب سے غیر قانونی تشہیر کرکے فراڈ کے ذریعے عوام سے رقم بٹوری جاتی ہے، لہٰذا ان کی تشہیر پر پابندی لگادی گئی ہے۔

مزید پڑھیں: اسلام آباد میں 2 ماہ کیلئے ڈبل سواری پر پابندی عائد

شہر میں ہاؤسنگ سوسائٹی کی تشہیر، اخبارات میں اشتہارات دینے، پلاٹس فروخت کرنے، ممبرشپ فیس لینے سے متعلق تمام قسم کی تشہیر پر پابندی ہوگی۔

ڈان کو موصول نوٹی فکیشن کے مطابق ضلعی مجسٹریٹ نے خیابان سہروردی، تھرڈ ایونیو، فورتھ ایونیو اور سرینہ چوک سمیت ریڈزون میں 5 یا اس سے زائد افراد کے اکٹھے ہونے پر بھی پابندی عائد کردی ہے۔

ضلعی انتظامیہ نے اسلام آباد میں پہاڑوں کی کھدائی سمیت فرقہ واریت میں استعمال ہونے والے سی ڈی، ڈی وی ڈی اور ساؤنڈ سسٹم پر بھی پابندی عائد کردی۔

اس کے علاوہ ضلعی انتظامیہ نے شہر میں آتش بازی، اس کا سامان رکھنے، خرید و فروخت کرنے پر بھی پابندی عائد کردی جبکہ آتش بازی کے اوزار رکھنے کی بھی ممانعت ہوگی۔

یہ بھی پڑھیں: اسلام آباد میں ہاؤسنگ سوسائٹیز کی تشہیر پر پابندی

وفاقی دارالحکومت کی انتظامیہ کی جانب سے جاری نوٹیفکیشن میں شہر بھر میں فرقہ واریت پر مبنی بینرز لگانے، وال چاکنگ کرنے اور پمفلٹس بانٹنے پر بھی پابندی لگادی گئی ہے۔

اسلام آباد میں لاؤڈ اسپیکر سے فرقہ واریت پر مبنی تقاریر پر بھی پابندی ہوگی جبکہ تمام قسم کے جلسے، جلوس، اجلاس، مجالس اور مذہبی اجتماعات پر بھی پابندی عائد کردی گئی۔

نوٹی فکیشن کے مطابق یہ تمام پابندیاں دفعہ 144 کے تحت ڈپٹی کمشنر حمزہ شفقت نے عائد کی۔

ان تمام پابندیوں کا اطلاق 14 جنوری سے آئندہ 2 ماہ تک ہوگا جبکہ خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔