اسپیس ایکس کا اسٹار شپ راکٹ کامیاب لینڈنگ کے بعد دھماکے سے تباہ

04 مارچ 2021
— رائٹرز فوٹو
— رائٹرز فوٹو

اسپیس ایکس کا اسپیس کرافٹ کامیابی سے لینڈ ہونے کے بعد اچانک دھماکے سے پھٹ کر تباہ ہوگیا۔

اسپیس ایکس کا اسٹار شپ ایس این 10 پروٹوٹائپ اسپیس کرافٹ تھا جس نے امریکی ریاست ٹیکساس سے پرواز کی اور پھر واپس زمین پر آکر اتر گیا۔

اسٹار شپ کی کامیاب لینڈنگ پر وہاں موجود عملے نے جشن منانا شروع کردیا تھا۔

مگر چند منٹ بعد وہ دھماکے سے ہزاروں ٹکڑوں میں تبدیل ہوگیا۔

یہ تیسری بار ہے جب اسپیس ایکس کے اس اسٹار شپ نے کامیاب پرواز بھری مگر لینڈنگ کے دوران یا اس بار اترنے کے بعد آگ کے گولے میں تبدیل ہوگیا۔

کمپنی کے بانی ایلون مسک کی نظر میں نتیجہ مکمل ناکامی نہیں۔

انہوں نے ایک ٹوئٹ میں کہا 'اسٹار شپ 10 سالم حالت میں لینڈ ہوا، اسپیس ایکس ٹیم نے زبردست کام کیا، ایک دن اسٹار شپ کی پروازیں کامیابی کے حقیقی پیمانے کو چھولیں گی'۔

اسٹار شپ ایس این 10 نے اسپیس ایکس کی دیگر 2 کوششوں کے مابلے میں لینڈنگ میں کافی حد تک کامیابی حاصل کرلی تھی۔

اس سے قبل دسمبر میں ایس این 8 لینڈنگ کے دوران دھماکے سے پھٹ گیا تھا جبکہ فروری میں ایس این 9 کو ناکامی کا سامنا ہوا۔

اسپیس ایکس نے ایس این 1 کی لینڈنگ کے بعد کے لمحات لائیو اسٹریم کیے تھے۔

ایلون مسک نے توقع ظاہر کی ہے کہ یہ خلائی جہاز بتدریج انسانوں اور سو ٹن سامان کو مستقبل میں چاند اور مریخ پر پہنچاسکیں گے۔

اسٹار شپ راکٹ ایلون مسک کے خلائی سفر کو معمول بنانے کے منصوبوں کا اہم ترین حصہ ہے۔

ایلون مسک کے مطابق توقع ہے کہ 2023 میں پہلے عام انسان کو چاند پر بھیجنے میں کامیابی ہوسکے گی جس کے لیے اسٹار شپ کو ہی استعمال کیا جائے گا۔

تبصرے (0) بند ہیں