• KHI: Zuhr 12:34pm Asr 5:17pm
  • LHR: Zuhr 12:05pm Asr 5:01pm
  • ISB: Zuhr 12:10pm Asr 5:11pm
  • KHI: Zuhr 12:34pm Asr 5:17pm
  • LHR: Zuhr 12:05pm Asr 5:01pm
  • ISB: Zuhr 12:10pm Asr 5:11pm

’دل دل پاکستان‘ سے ’میرا دل بدل دے‘ تک سفر کرنے والے جنید جمشید

میوزک کو چھوڑ کر نعت خوانی و اسلامی تعلیمات کو اپنانے والے جنید جمشید 7 دسمبر 2016 کو جہانِ فانی سے رخصت ہوئے تھے۔
شائع December 7, 2020

گلوکاری کو چھوڑ کر مذہب کی جانب راغب ہونے والے اور معروف فیشن برانڈ ’جے ڈاٹ‘ کے مالک جنید جمشید کو مداحوں سے بچھڑے چار سال گزر گئے، وہ 7 دسمبر 2016 کو ایک طیارے کے حادثے میں دیگر 47 افراد کے ساتھ جاں بحق ہوگئے تھے۔

جنید جمشید اپنی اہلیہ اور دیگر 47 افراد کے ساتھ اسلام آباد کے قریب حویلیاں میں ہونے والے طیارہ کے حادثے میں جہانِ فانی سے کوچ کر گئے تھے، وہ چترال سے واپس اسلام آباد آ رہے تھے کہ پی آئی اے کا طیارہ حادثے کا شکار ہوا۔

جنید جمشید کو اگرچہ نئی نسل ایک نعت خوان، مذہبی شخص اور ملبوسات کے برانڈ کے مالک کے طور پر جانتی ہیں تاہم کئی لوگ انہیں ماضی کے مقبول گلوکار کے طور پر بھی جانتے ہیں۔

دل دل پاکستان اور سانولی سلونی جنید جمشید کے سب سے مقبول گیت ہیں—اسکرین شاٹ/ یوٹیوب
دل دل پاکستان اور سانولی سلونی جنید جمشید کے سب سے مقبول گیت ہیں—اسکرین شاٹ/ یوٹیوب

ایک وقت تھا جب جنید جمشید اسٹیج پر پرفارم کرتے تھے تو وہاں موجود لوگوں کو اپنا دیوانہ بنا دیتے تھے اور متعدد گلوکار آج بھی ان کے ماضی کے اسٹائل کی نقل کرتے دکھائی دیتے ہیں۔

’دل دل پاکستان‘ جیسا مقبول گیت گانے والے جنید جمشید کو 1990 میں سب سے زیادہ مقبولیت حاصل ہوئی اور انہیں اسی دہائی کے سب سے مقبول گلوکار کے طور پر بھی جانا جاتا رہا۔

جنید جمشید نے وائٹل سائن نامی بینڈ کے ساتھ گلوکاری کی— اسکرین شاٹ / یوٹیوب
جنید جمشید نے وائٹل سائن نامی بینڈ کے ساتھ گلوکاری کی— اسکرین شاٹ / یوٹیوب

جنید جمشید بطور موسیقار اور گلوکار مشہور زمانہ بینڈ ’وائٹل سائن‘ کے ساتھ رہے اور انہوں نے اسی بینڈ کے ساتھ رہتے ہوئی ہی، ’دل دل پاکستان‘، ’تم مل گئے‘ اور ’سانولی سلونی‘ جیسے مقبول گیت گائے۔

تقریباً ڈیڑھ دہائی تک موسیقی کی دنیا میں اپنا مقام بنانے کے بعد اپنے میوزیکل کیریئر کے عروج کے 2004 میں جنید جمشید نے موسیقی کی دنیا کو چھوڑنے کا اعلان کرکے سب کو حیران کردیا۔

جنید جمشید کا 2004 میں رجحان مذہب کی جانب ہوگیا اور وہ تبلیغی جماعت کا حصہ بن گئے اور گلوکاری کو ترک کردیا، ساتھ ہی انہوں نے کاروبار میں اپنا نام روشن کیا اور ملبوسات کے برانڈ ’جے ڈاٹ‘ کو متعارف کرایا جو آج پاکستان کے معروف ترین برانڈز میں شمار ہوتا ہے۔

جنید جمشید کو اگرچہ بچھڑے ہوئے 4 سال ہوگئے ہیں تاہم آج بھی وہ مداحوں کی دلوں میں زندہ ہیں اور آج بھی لوگ ان کی آواز سن کر ان کے مداح بن جاتے ہیں۔

چوتھی برسی کے موقع پر جنید جمشید کو مداحوں نے یاد کرتے ہوئے انہیں خراج عقیدت پیش کرنے کے لیے ٹوئٹر پر ان کے نام کا ٹرینڈ بھی بنایا اور 7 دسمبر 2020 کی صبح سے ہی جنید جمشید کے نام کا ٹرینڈ ٹوئٹر پر ٹاپ رہا۔