بالوں کے سفید ہونے کی 4 وجوہات

20 نومبر 2016

ای میل

— کریٹیو کامنز فوٹو
— کریٹیو کامنز فوٹو

ہر ایک کو اس کا سامنا ہوتا ہے اور متعدد افراد تو سینکڑوں بلکہ ہزاروں روپے اسے چھپانے میں لگا دیتے ہیں اور وہ سر کے سفید بال۔

سفید بال بڑھاپے کی واضح علامات میں سے ایک مانے جاتے ہیں مگر ہر ایک انہیں دیکھ کر خوش نہیں ہوتا خاص طور پر اگر وہ جلد نمودار ہوجائیں۔

جیسے کچھ لوگوں کے سفید بال تیس سال کے بعد ظاہر ہونے لگتے ہیں تاہم اگر یہ بیس سال کے بعد نظر آنے لگے تو یہ بھی آج کل کوئی غیر معمولی بات نہیں، خاص طور پر اگر خاندان میں اس کی تاریک ہو۔

تاہم اگر آپ کے بال خاندان کے مقابلے میں جلد سفید ہورہے ہیں تو اس میں ارگرد کا ماحول اور طرز زندگی کے عناصر کردار ادا کرتے ہیں جو درج ذیل ہیں۔

بہت زیادہ تناﺅ

طبی ماہرین نے تناﺅ اور سفید بالوں کے درمیان تعلق کافی بحث کی ہے اور کچھ رپورٹس میں اس کے درمیان تعلق ثابت بھی کیا گیا ہے۔ نیویارک یونیورسٹی ایک تحقیق کے مطابق ذہنی تناﺅ بالوں کی جڑوں میں موجود خلیات کی شرح میں کمی کا باعث بنتا ہے۔

طبی مسئلہ

کچھ واقعات میں بالوں میں قبل از وقت سفیدی اور تھائی رائیڈ امراض کے درمیان تعلق سامنے آیا، آٹو امیون امراض جو کہ جلد اور بالوں پر حملہ آور ہوتے ہیں، وہ بھی بالوں میں سفیدی لانے کا باعث بنتے ہیں، تو اگر آپ کا جسم بالوں کے خلیات پر حملہ آور ہوجائے تو وہ سفید ہوجاتے ہیں۔

وٹامن کی کمی

ایک اور وجہ وٹامن بی 12 کی کمی ہے، ایسے متعدد عناصر ہیں جو آپ کو خطے میں ڈالتے ہیں، جیسے صرف سبزیاں کھانے تک محدود رہنا، برتھ کنٹرول کی ادویات کا استعمال یا غذائی نالی کے مسائل، تاہم اگر وٹامن بی 12 کی وجہ بال سفید ہورہے ہیں تو اس کا مطلب یہ ہے کہ جسم میں خون کی کمی ہے۔

تمباکو نوشی

ایک اور ممکنہ وجہ تمباکو نوشی ہے کیونکہ یہ عادت جلد اور بالوں کے لیے بدترین ثابت ہوتی ہے۔ ایک تحقیق کے دوران سیگریٹ نوشی اور تیس سال کی عمر سے قبل بالوں کی سفیدی کے درمیان تعلق پایا گیا، اگر کوئی کافی عرصے سے تمباکو نوشی کررہا ہو تو آپ اس کی جلد پر جھریاں بھی کافی جلد دیکھ سکتے ہیں اور چونکہ کھوپڑی کی جھریاں نظر آنا ممکن نہیں مگر پھر بھی یہ عادت بالوں کے خلیات پر اثرانداز ہوتی ہے۔