سعودی عرب کا امدادی پیکج کا اعلان، اسٹاک مارکیٹ میں زبردست تیزی

اپ ڈیٹ 24 اکتوبر 2018

پاکستان اسٹاک ایکسچینج (پی ایس ایکس) میں کئی روز بعد زبردست تیزی دیکھنے میں آئی اور بینچ مارک 'کے ایس ای 100 انڈیکس' میں ایک ہزار 500 پوائنٹس سے زائد کا اضافہ ہوا۔

تجزیہ کاروں کا خیال ہے کہ سعودی عرب کا 6 ارب ڈالر کے بیل آؤٹ پیکج کا اعلان سرمایہ کاروں کا اعتماد بحال کرنے کی بڑی وجہ ہے۔

اسٹاک مارکیٹ میں کاروبار کے آغاز سے ہی مثبت رجحان دیکھا گیا اور پہلے 10 منٹ میں ہی انڈیکس میں ایک ہزار پوائنٹس سے زائد کا اضافہ ہوا۔

دوپہر 12 بجے کے وقت انڈیکس دن کی بلند ترین سطح 39 ہزار 223 پوائنٹس پر پہنچا جبکہ کاروباری حجم اور مالیت میں بھی کئی گنا اضافہ ہوا۔

کیمیکل کے شعبے میں سب سے زیادہ کاروباری سرگرمی دیکھی گئی جبکہ پاور جنریشن اینڈ ڈسٹریبیوشن اور بینکنگ کے شعبے بھی نمایاں رہے۔

سیشن کے دوران اسٹاک بروکرز اپنی اسکرین پر مارکیٹ کے صورتحال کا جائزہ لے رہے ہیں — اے ایف پی
سیشن کے دوران اسٹاک بروکرز اپنی اسکرین پر مارکیٹ کے صورتحال کا جائزہ لے رہے ہیں — اے ایف پی

سینئر تجزیہ کار احسن محنتی نے کہا کہ 6 ارب ڈالر کے سعودی پیکج نے مارکیٹ کو نئی طاقت بخشی ہے اور مندی کے بادل جھٹ گئے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ اس پیکج کے باعث روپے کی قدر میں بھی بہتری آئی ہے۔

ٹاپ لائن سیکیورٹیز کے تجزیہ کار نبیل خورشید کا کہنا تھا کہ سعودی عرب کے کامیاب دورے کے بعد سرمایہ کاروں کو وزیر اعظم کے دورہ ملائیشیا اور چین سے بھی بہت امیدیں ہیں۔

انہوں نے آئندہ چند روز تک اسٹاک مارکیٹ میں مثبت رجحان جاری رہنے کی امید کا اظہار کیا۔

تبصرے (0) بند ہیں