کرم ایجنسی میں دھماکا، 4 اہلکار ہلاک

03 فروری 2015

ای میل

فائل فوٹو/ اے پی—۔
فائل فوٹو/ اے پی—۔

پشاور: پاکستان کے قبائلی علاقے فاٹا کی کرم ایجنسی میں سیکیورٹی فورسز کی گاڑی کے قریب دھماکے کے نتیجے میں چار اہلکار ہلاک ہوگئے۔

نمائندہ ڈان نیوز کے مطابق کرم ایجنسی کے علاقہ ورماگئی میں سیکیورٹی فورسز کی گاڑی کو ریموٹ کنٹرول بم سے نشانہ بنایا گیا، جس کے نتیجے میں 4 اہلکار ہلاک ہوگئے۔

ہلاک اہلکاروں کی لاشیں پوسٹ مارٹم کے لیے قریبی ہسپتال منتقل کردی گئیں۔

واقعے کے بعد سیکیورٹی فورسز نے علاقے کو گھیرے میں لے لیا اور علاقے کو سیل کر کے تفتیش کا آغاز کردیا گیا۔

کرم ایجنسی پاک افغان سرحد کے قریب واقع ایک انتہائی حساس علاقہ ہے جسے شدت پسندوں کا مضبوط گڑھ تصور کیا جاتا ہے۔

واضح رہے کہ صوبہ خیبر پختونخوا اور فاٹا کے قبائلی علاقوں میں گزشتہ کچھ عرصے سے پرتشدد کارروائیوں اور سیکیورٹی اہلکاروں پر حملوں میں اضافہ ہوگیا ہے۔

سیکیورٹی حکام کے مطابق یہ واقعات شمالی وزیرستان میں جاری پاک فوج کے آپریشن کا ردعمل ہو سکتے ہیں، تاہم ان کا دعوی ہے کہ دہشت گردوں کے بڑے حملے کرنے کی صلاحیت ختم کر دی گئی ہے اس لیے وہ اب اس طرح کی کارروائیاں کر رہے ہیں۔

یاد رہے کہ پاک فوج نے فاٹا کے قبائلی علاقے شمالی وزیرستان میں دہشت گردوں کے خلاف آپریشن 'ضرب عضب' کا آغاز کیا تھا، جس کا دائرہ کار پھر خیبر ایجنسی تک بڑھا دیا گیا تھا۔