• KHI: Maghrib 7:21pm Isha 8:46pm
  • LHR: Maghrib 7:04pm Isha 8:38pm
  • ISB: Maghrib 7:14pm Isha 8:51pm
  • KHI: Maghrib 7:21pm Isha 8:46pm
  • LHR: Maghrib 7:04pm Isha 8:38pm
  • ISB: Maghrib 7:14pm Isha 8:51pm

ایف آئی اے نے رابطہ کیا، نہ ان کا کوئی سمن ملا، حریم شاہ

شائع January 14, 2022
ٹک ٹاک اسٹار کے مطابق وہ ایف آئی اے کے ساتھ تعاون کریں گی—فوٹو: انسٹاگرام
ٹک ٹاک اسٹار کے مطابق وہ ایف آئی اے کے ساتھ تعاون کریں گی—فوٹو: انسٹاگرام

ٹک ٹاک اسٹار حریم شاہ نے کہا ہے کہ انہیں وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف آئی اے) کی جانب سے نہ تو کوئی سمن ملا ہے اور نہ ہی ادارے کے کسی فرد نے ان سے تاحال کوئی رابطہ کیا۔

دو دن قبل ایف آئی اے کراچی کے سائبر اور منی لانڈرنگ ونگ نے بتایا تھا کہ حریم شاہ کے خلاف رقم کی غیر قانونی منتقلی اور سائبر کرائم سے متعلق تفتیش شروع کردی گئی۔

اب حریم شاہ نے کہا ہے کہ انہیں میڈیا کے ذریعے معلوم ہوا کہ ان کے خلاف ایف آئی اے نے تفتیش شروع کردی جب کہ ان سے نہ تو وفاقی تحقیقاتی ادارے نے رابطہ کیا، نہ ہی انہیں سمن ملا اور کسی نے فون کرکے انہیں تحقیق سے متعلق بتایا۔

حریم شاہ نے برطانیہ میں موجود پاکستانی صحافی مرتضیٰ شاہ کو بتایا کہ وہ تفتیش کے لیے ایف آئی اے سے مکمل تعاون کریں گی اور یہ کہ انہیں تفتیش سے ڈرنے کی کوئی ضرورت نہیں، انہوں نے کوئی غلط کام ہی نہیں کیا۔

یہ ویڈیو بھی دیکھیں: ایف آئی اے کے حرکت میں آتے ہی حریم شاہ کا یو-ٹرن

حریم شاہ کا کہنا تھا کہ انہوں نے غیر ملکی کرنسی کے ساتھ مذاق میں ویڈیو بنائی تھی، انہوں نے نہ تو کوئی منی لانڈرنگ کی اور نہ ہی انہوں نے کبھی ایسا کوئی غیر قانونی کام کیا ہے۔

انہوں نے بتایا کہ یہ تاثر بھی غلط ہے کہ وہ پاکستان چھوڑ کر برطانیہ منتقل ہوئی ہیں، ٹک ٹاکر نے واضح کیا کہ انہوں نے پاکستان نہیں چھوڑا۔

ان کے ساتھ ویڈیو میں موجود شخص نے اپنا نام دانیال ملک بتایا اور دعویٰ کیا کہ حریم شاہ نے ان کے پیسوں کے ساتھ ہی ویڈیو بنائی تھی۔

دانیال ملک نے بتایا کہ وہ ماضی میں پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے ساتھ منسلک رہے ہیں اور 2018 کے عام انتخابات میں گجرات کے این اے 68 کے حلقے سے سیٹ دینے پر ان سے ساڑھے تین کروڑ روپے مانگے گئے تھے۔

دانیال ملک نے دعویٰ کیا کہ وہ عمران خان سے بھی مل چکے ہیں اور وہ گجرات کے واحد صادق و امین شخص ہیں، جن سے پی ٹی آئی والوں نے ٹکٹ کے لیے ساڑھے تین کروڑ روپے مانگے تھے۔

انہوں نے بتایا کہ وہ برطانیہ میں منی ٹرانسفر کا قانونی کام کرتے ہیں اور جن پیسوں کے ساتھ حریم شاہ نے ویڈیو بنائی، وہ ان کے تھے، جنہیں ٹرانسفر کیا گیا اور ان کے پاس مذکورہ رقم کو ٹرانسفر کرنے کے ثبوت موجود ہیں۔

اس سے قبل حریم شاہ کی ہزاروں برطانوی پاؤنڈز کے ساتھ بنائی گئی ویڈیو وائرل ہوئی تھی، جس میں انہوں نے دعویٰ کیا تھا کہ وہ مذکور غیر ملکی کرنسی پاکستان سے لے کر برطانیہ منتقل ہوئیں ہیں اور انہیں کسی نے نہیں روکا۔

حریم شاہ کی مذکورہ ویڈیو سامنے آنے کے بعد ایف آئی اے سندھ نے ان کے خلاف منی لانڈرنگ کی تفتیش شروع کرنے کا اعلان کیا تو ٹک ٹاکر نے وضاحتی ویڈیو جاری کی تھی کہ انہوں نے پیسوں سے متعلق ویڈیو مذاق میں بنائی تھی،

حریم شاہ کی وضاحتی ویڈیو پر ایف آئی اے کے سائبر ونگ نے ان کے خلاف سائبر کرائم کے تحت تفتیش کرنے کا اعلان کیا تھا اور کہا تھا کہ ٹک ٹاکر کے خلاف مقدمہ دائر کرکے تحقیق شروع کردی۔

مگر اب حریم شاہ نے کہا ہے کہ ان سے نہ تو ایف آئی اے نے رابطہ کیا، نہ سمن بھیجا، نہ فون کیا جب کہ انہیں وفاقی تحقیقاتی ادارے کی تفتیش کا علم میڈیا کے ذریعے ہوا۔

کارٹون

کارٹون : 24 جولائی 2024
کارٹون : 23 جولائی 2024