ایک اور سماجی کارکن اسلام آباد سے لاپتہ

اپ ڈیٹ 11 جنوری 2017

ای میل

اسلام آباد: ایک اور سرگرم سماجی کارکن ثمر عباس بھی وفاقی دارالحکومت اسلام آباد سے مبینہ طور پر لاپتہ ہوگئے۔

سول پروگریسیو الائنس پاکستان (سی پی اے پی) کے صدر ثمر عباس کراچی میں مقیم ایک سماجی کارکن ہیں، جو متعدد فورمز پر ملک میں اقلیتوں کے خلاف ہونے والے مظالم کے خلاف آواز اٹھاتے رہتے ہیں۔

حال ہی میں انھوں نے مرحوم جنید جمشید کی 'کلین کراچی' مہم میں بھی ان کے ساتھ حصہ لیا تھا۔

مزید پڑھی:سماجی کارکن پروفیسر سلمان حیدر لاپتہ

سول پروگریسیو الائنس پاکستان کے جنرل سیکریٹری سید طالب عباس کے مطابق ثمر عباس بزنس کے سلسلے میں کراچی سے اسلام آباد گئے۔

واضح رہے کہ ثمر عباس ایک آئی ٹی فرم چلاتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:سلمان حیدر بھی 'وہی فائل' بن گئے

سید طالب عباس نے بتایا کہ 'وہ مسلسل اپنے اہلخانہ سے رابطے میں تھے، لیکن ہفتہ 7 جنوری کو ثمر عباس کا موبائل فون بند ہوگیا اور اس کے بعد سے کسی کا ان سے رابطہ نہ ہوسکا'۔

انھوں نے بتایا کہ 40 سالہ ثمر شادی شدہ ہیں اور ان کے 2 بچے ایک بیٹا اور ایک بیٹی ہے۔

طالب عباس کے مطابق ثمر عباس کے اہلخانہ ان کی گمشدگی کے خلاف آج بروز بدھ (11 جنوری) کو ایف آئی آر درج کروائیں گے۔

یہ خبر 11 جنوری 2017 کے ڈان اخبار میں شائع ہوئی