بے مثال فنکار معین اختر کو بچھڑے 8 برس بیت گئے

اپ ڈیٹ 22 اپريل 2019

ای میل

معین اختر 22 اپریل 2011 کو حرکت قلب بند ہونے سے انتقال کرگئے تھے —فوٹو/ اسکرین شاٹ
معین اختر 22 اپریل 2011 کو حرکت قلب بند ہونے سے انتقال کرگئے تھے —فوٹو/ اسکرین شاٹ

آج 22 اپریل 2019 ہے، آج کے دن 2011 میں نمکین، کرارے اور برجستہ جملے بولنے والے مقبول فنکار معین اختر ہم سے رخصت ہوے تھے۔

معین اختر کے مداح آج ان کی 8ویں برسی منا رہے ہیں۔

24 دسمبر 1950 کو پیدا ہونے والے ور اسٹائل فنکار نے میزبانی، اداکاری، کامیڈی، فلم پروڈکشن، ڈائریکشن اور گائیکی کے میدان میں منفرد مقام حاصل کیا۔

معین اختر نے ٹی وی پر 6 ستمبر 1966 کو پہلا پروگرام کرکے شوبز کی دنیا میں قدم رکھا اور دیکھتے ہی دیکھتے سب کی پسند بن گئے۔

معین اختر کا خاندان قیام پاکستان کے بعد ہجرت کرکے کراچی میں قیام پذیر ہوا۔

انہوں نے اپنی تمام تر تعلیم کراچی میں ہی حاصل کی، دوران تعلیم معین اختر غیر نصابی سرگرمیوں میں بھی بڑھ چڑھ کر حصہ لیتے تھے۔

انہیں انگریزی، بنگالی، سندھی، پنجابی، میمن، پشتو، گجراتی اور اردو زبان پر مکمل عبور حاصل تھا۔

وہ شوبز کی دنیا میں نئی نسل کے لیے مشعل راہ تھے، ان کی خدمات کے اعتراف میں انہیں 'حسن کارکردگی' اور 'ستارہ امتیاز' کے ایوارڈز سے بھی نوازا گیا۔

معین اختر 22 اپریل 2011 کو حرکت قلب بند ہونے سے انتقال کرگئے تھے۔