ووٹ کی طاقت سے کشمیر میں حکومت بنائیں گے، بلاول بھٹو زرداری

اپ ڈیٹ 05 جولائ 2021
بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ بزدل حکمراں وفاق میں ہوں یا مظفر آباد میں خوفزد ہیں — فوٹو: ڈان نیوز
بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ بزدل حکمراں وفاق میں ہوں یا مظفر آباد میں خوفزد ہیں — فوٹو: ڈان نیوز

پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کا کہنا ہے کہ ووٹ کی طاقت سے 25 جولائی کو آزاد کشمیر میں حکومت بنائیں گے اور یہاں کے عوام کو معاشی طور پر مضبوط کریں گے۔

نکیال، آزاد کشمیر میں انتخابی جلسے سے خطاب کرتے ہوئے بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ '5 جولائی ہر محب وطن کے لیے سیاہ ترین دن ہے، 5 جولائی کو قائد عوام کو شہید کرکے جمہوریت پر شب خون مارا گیا، قائد عوام جس نے آئین دیا، غریب کو آواز دی، مزدور کو اس کا حق دلایا، کسان کو زمین دلائی اس کو جیل میں بند کرکے تختہ دار پر لٹکایا گیا، وہ سمجھتے تھے کہ قائد عوام کو شہید کرکے عوام کے حقوق کا سودا کر لیں گے'۔

انہوں نے کہا کہ 'اس صورتحال میں بینظیر بھٹو نے پارٹی کا پرچم تھاما اور دو آمروں کا مقابلہ کیا لیکن 2007 میں انہیں بھی شہید کرکے ہم سے چھین لیا گیا، وہ سمجھتے تھے کہ بینظیر کو شہید کرکے پیپلز پارٹی کو ختم کر دیں گے اور اپنا غیر جمہوری نظام نافذ کر دیں گے لیکن ہم پیپلز پارٹی والوں کا دفاع کرنے کے لیے موجود ہیں اور بزدل حکمراں وفاق میں ہوں یا مظفر آباد میں خوفزد ہیں'۔

یہ بھی پڑھیں: عمران خان کشمیر کے بعد ملک کا جوہری پروگرام ختم کرنے کے درپے ہیں، بلاول کا الزام

ان کا کہنا تھا کہ 'سارے کٹھ پتلی جانتے ہیں کہ وہ کاغذی جماعتیں ہیں اور پیپلز پارٹی وہ واحد سیاسی جماعت ہے جس کے ساتھ عوام کھڑے ہیں، آپ پیپلز پارٹی سے کیوں خوفزہ ہیں، ہمارا مقابلہ کرنا چاہتے ہیں تو ووٹ کا مقابلہ کریں، ہم آپ کی طرح تشدد پر یقین نہیں رکھتے، اگر پیپلز پارٹی اس کھیل میں آجاتی اور اگر میں اپنے جیالوں کو حکم دے دوں، تو پھر آپ کہیں کے نہیں رہیں گے'۔

بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ 'ہم آپ کو اس قسم کی سیاست نہیں کرنے دیں گے، پیپلز پارٹی آزاد کشمیر کے صدر پر ووٹ کی عزت کا کہنے والوں نے فائر کروایا، کیا ووٹ کی عزت بندوق سے ہوتی ہے یا عوام کے ووٹ سے، ہم آپ کے خلاف ایک پتھر بھی نہیں اٹھائیں گے، ایک گولی بھی نہیں چلائیں گے، ہم آزاد کشمیر کے عوام کے ووٹ کی طاقت سے حکومت بنائیں گے'۔

انہوں نے کہا کہ 'انہیں معلوم ہونا چاہیے کہ پیپلز پارٹی کا نوجوان چیئرمین موجود ہے، ہمارے جیالوں کا امتحان نہ لیں، یہ وہ جیالے ہیں جو اپنی شادیوں میں مودی کو شرکت کی دعوت نہیں دیتے ہیں، یہ وہ جیالے ہیں جو انتخابات میں مودی کی فتح کے لیے دعا نہیں مانگتے ہیں، یہ جیالے مقبوضہ کشمیر کے عوام کے ساتھ شانہ بشانہ کھڑے ہیں اور ہمارے جیالوں کا نعرہ ہے کہ کشمیر پر سودا نامنظور'۔

ان کا کہنا تھا کہ 'ہم نے ہمیشہ کشمیر کاز کو ہر فورم پر لڑا، ایک طرف وہ قائد عوام تھا جو کشمیر میں ہڑتال کی کال دیتا تھا اور ایل او سی کے اس طرف بھی ہڑتال ہوتی تھی اور اس طرف بھی، اب آپ ہماری قسمت دیکھیں، ہمارا کٹھ پتلی وزیر اعظم ہے، مودی کشمیر میں تاریخی حملہ کرتا ہے تو کٹھ پتلی کہتا ہے میں کیا کروں'۔

مزید پڑھیں: مودی کو جواب دینا ہے تو پاکستان میں جمہوریت قائم کرنی ہوگی، بلاول بھٹو

چیئرمین پیپلز پارٹی نے کہا کہ 'آزاد کشمیر کے عوام 25 جولائی کو پوری دنیا کو پیغام دیں گے کہ یہاں کے عوام ایک عوامی جماعت کے ساتھ ہیں جو نہ اسلام آباد میں کٹھ پتلی چاہتے ہیں نہ مظفر آباد میں، ہم نے نہ صرف مقبوضہ کشمیر کے عوام کا ساتھ دینا ہے بلکہ آزاد کشمیر کے عوام کو معاشی طور پر مضبوط بنانا ہے'۔

انہوں نے کہا کہ 'اس بزدل کٹھ پتلی نے 50 لاکھ گھر بنانے کا وعدہ کیا تھا لیکن حکومت میں آکر تجاوزات کے نام پر عوام کو بے گھر کر دیا، ایک کروڑ نوکریوں کا وعدہ کرکے نوکریاں چھین لیں، کسی جماعت نے غریب کا ساتھ دیا ہے تو وہ پیپلز پارٹی ہے، کشمیر کا فیصلہ کشمیر کے عوام کریں گے'۔

تبصرے (0) بند ہیں