• KHI: Fajr 4:13am Sunrise 5:42am
  • LHR: Fajr 3:18am Sunrise 4:57am
  • ISB: Fajr 3:13am Sunrise 4:57am
  • KHI: Fajr 4:13am Sunrise 5:42am
  • LHR: Fajr 3:18am Sunrise 4:57am
  • ISB: Fajr 3:13am Sunrise 4:57am

ٹک ٹاک کا نامناسب مواد کو روکنے کا فیچر متعارف کرانے کا اعلان

شائع July 13, 2022
فیچرز کو جلد پیش کردیا جائے گا—فوٹو: ٹک ٹاک
فیچرز کو جلد پیش کردیا جائے گا—فوٹو: ٹک ٹاک

شارٹ ویڈیو شیئرنگ ایپلی کیشن ٹک ٹاک نے نامناسب مواد یا غیر پسندیدہ ویڈیوز کو روکنے کے لیے ’ناٹ انٹریسٹڈ‘ فیچر متعارف کرانے کا اعلان کردیا۔

ٹک ٹاک نے اپنی بلاگ پوسٹ میں جلد ہی متعدد نئے فیچرز متعارف کرانے کا اعلان کرتے ہوئے تصدیق کی کہ جلد ہی تمام صارفین نامناسب مواد کو روکنے کے فیچر کا استعمال کر سکیں گے۔

پوسٹ کے مطابق ٹک ٹاک ماہرین ایسے فیچر پر کام کر رہے ہیں، جس کے تحت صارف ان تمام ویڈیوز کو بلاک کر سکیں گے جنہیں وہ دیکھنا پسند نہیں کرتے۔

رپورٹ کے مطابق مذکورہ فیچر کے تحت صارفین کو وہ تمام الفاظ ہیش ٹیگ کے ساتھ ’ناٹ انٹریسٹڈ‘ فیچر میں شامل کرنے پڑیں گے، جن کی ویڈیوز صارفین دیکھنا پسند نہیں کرتے۔

—فوٹو: ٹک ٹاک
—فوٹو: ٹک ٹاک

مثال کے طور پر اگر کوئی صارف ڈانس کی ویڈیوز دیکھنا نہیں چاہتا تو اسے ’ناٹ انٹریسٹڈ‘ فیڈ میں ہیش ٹیگ کے ساتھ ڈانس کا لفظ شامل کرنا پڑے گا، اسی طرح جو مار دھاڑ کی ویڈیوز دیکھنا پسند نہیں کرے گا، اسے ’فائٹ‘ کا لفظ شامل کرنا پڑے گا۔

ساتھ ہی ٹک ٹاک کے بلاگ میں بتایا گیا کہ مذکورہ فیچر کو استعمال کرتے ہوئے صارفین کو انتہائی ذہانت سے کام لینا پڑے گا، کیوں کہ اگر انہوں نے ڈانس کا لفظ فیچر مٰں شامل کرلیا تو انہیں ہر طرح کی ڈانس ویڈیوز دیکھنے کو نہیں ملیں گی۔

علاوہ ازیں ٹک ٹاک انتظامی نے بلاگ میں بتایا کہ اس کے ماہرین ’کانٹینٹ لیول‘ نامی ایک ایسے فیچر بھی کام کر رہے ہیں جس کے ذریعے ایپ پر اپ لوڈ کیے گئے مواد کو عمر کے حساب سے لوگوں کو ریکمنڈ کیا جائے گا، یعنی مذکورہ فیچر کے تحت خطرناک قسم کے مواد کو کم عمر افراد تک رسائی نہیں دی جائے گی یا پھر ایسی ویڈیو پر انتباہ جاری کیا جائے گا کہ اس کا سیفٹی اسکور کیا ہے؟

’کانٹینٹ لیول‘ نامی فیچر سے متعلق انتظامیہ نے وضاحت نہیں کی کہ وہ اس فیچر کے تحت کس طرح خطرناک ویڈیو کی اسکورنگ کریں گے؟ تاہم بتایا گیا کہ مذکورہ فیچر کے تحت کم عمر افراد کو خطرناک مواد سے دور رکھنے میں مدد ملے گی۔

ٹک ٹاک کو نامناسب، فحش اور خطرناک ویڈیوز یا مواد کی وجہ سے پاکستان سمیت دنیا بھر میں تنقید کا نشانہ بنایا جاتا رہا ہے اور اسی وجہ سے اس پر امریکا سمیت متعدد ممالک میں متعدد بار جزوی پابندی بھی عائد ہو چکی ہے۔

نامناسب اور فحش مواد کی وجہ سے ٹک ٹاک پر پاکستان میں بھی ماضی میں متعدد بار جزوی طور پر پابندی عائد کی جا چکی ہے جب کہ اسے بھارت سمیت دیگر سیکولر اور بولڈ مواد تیار کرنے والے ممالک میں بھی پابندی کا سامنا رہا ہے۔

—فوٹو: ٹک ٹاک
—فوٹو: ٹک ٹاک

کارٹون

کارٹون : 14 جون 2024
کارٹون : 13 جون 2024