• KHI: Maghrib 7:23pm Isha 8:50pm
  • LHR: Maghrib 7:08pm Isha 8:43pm
  • ISB: Maghrib 7:18pm Isha 8:58pm
  • KHI: Maghrib 7:23pm Isha 8:50pm
  • LHR: Maghrib 7:08pm Isha 8:43pm
  • ISB: Maghrib 7:18pm Isha 8:58pm

کالعدم تحریک طالبان پاکستان کا اہم سرغنہ افغان صوبے کنڑ میں مارا گیا

شائع June 19, 2024
فائل فوٹو
فائل فوٹو

کالعدم تحریک طالبان پاکستان (ٹی ٹی پی)کا ایک اور اہم سرغنہ عبدالمنان عرف حکیم اللہ افغانستان کے صوبے کنڑ میں مارا گیا۔

ڈان نیوز کے مطابق کالعدم ٹی ٹی پی اور اس سے منسلک دہشتگرد گروپوں میں اندرونی اختلافات شدت اختیار کرتے جارہے ہیں، افغانستان میں کالعدم ٹی ٹی پی کی لڑائی سے دہشتگرد کمانڈرز پر اسرار طور پر مارے جا رہے ہیں۔

کنڑ میں کالعدم ٹی ٹی پی شوریٰ ملاکنڈ کے رکن عبدالمنان عرف حکیم اللہ کو ہلاک کردیا گیا ہے، اہم دہشتگرد سرغنہ کی ہلاکت کالعدم ٹی ٹی پی کی افغانستان میں موجودگی کا واضح ثبوت ہے۔

دہشتگرد عبدالمنان ٹارگٹ کلنگ سمیت متعدد دہشتگردانہ سرگرمیوں میں ملوث تھا، عبدالمنان کالعدم ٹی ٹی پی لیڈر عظمت اللہ محسود، ولی مالاکنڈ کا دست راست تھا، عبد المنان باجوڑ میں دہشتگردی کی کارروائیاں تشکیل دینے میں کلیدی کردار ادا کرتا تھا۔

عبدالمنان نے2007 سے سیکیورٹی فورسز، معصوم شہریوں کےخلاف کارروائیوں میں حصہ لیا، 2014 میں دہشت گرد عبدالمنان کو افغان حکومت نے صوبہ ننگر ہار سے گرفتارکیا، 2021میں افغان طالبان کے کابل پر قبضے کے بعد عبدالمنان کو رہا کر دیا گیا تھا، عبدالمنان کے بھائی طارق عرف اسد کا تعلق بھی کالعدم ٹی ٹی پی سے ہے۔

کالعدم ٹی ٹی پی کے اہم سرغنہ عبدالمنان کی ہلاکت کو جماعت کے لیے بڑا دھچکا قرار دیا جارہا ہے۔

کارٹون

کارٹون : 17 جولائی 2024
کارٹون : 16 جولائی 2024