بینائی سے محرومی کا خطرہ بڑھانے والی عادت

ستمبر 03 2017

ای میل

یہ دعویٰ بھارت میں ہونے والی ایک طبی تحقیق میں سامنے آیا— شٹر اسٹاک فوٹو
یہ دعویٰ بھارت میں ہونے والی ایک طبی تحقیق میں سامنے آیا— شٹر اسٹاک فوٹو

یہ تو بیشتر افراد جانتے ہیں کہ سیگریٹ پینا پھیپھڑوں کے کینسر سمیت دیگر امراض کا خطرہ بڑھاتا ہے جبکہ امراض قلب وغیرہ کا امکان بھی بڑھ جاتا ہے مگر یہ عادت آپ کو بینائی سے ہمیشہ کے لیے محروم بھی کرسکتی ہے۔

یہ دعویٰ بھارت میں ہونے والی ایک طبی تحقیق میں سامنے آیا۔

آل انڈیا انسٹیٹوٹ آف میڈیکل سائنسز کی تحقیق میں بتایا گیا کہ تمباکونوشی نہ صرف کینسر اور امراض قلب کا باعث بنتی ہے بلکہ اس کا لمبے عرصے تک استعمال اندھے پن کا شکار بھی کرسکتا ہے اور ایسا ہونے پر بینائی کی واپسی اکثر ناممکن ہوتی ہے۔

مزید پڑھیں : تمباکو نوشی ترک کرنے کے حیرت انگیز اثرات

تحقیق کے مطابق تمباکو نوشی کرنے والے افراد میں اس عادت سے دور رہنے والے دیگر افراد کے مقابلے میں موتیا کے مرض کا خطرہ زیادہ ہوتا ہے۔

تحقیق میں بتایا گیا کہ پانچ سے دس سال تک تمباکو نوشی بصری عصبہ یا آپٹک نرو پر منفی اثرات مرتب کرتی ہے جو کہ بینائی سے محرومی کا خطرہ بڑھاتا ہے۔

محققین کا کہنا تھا کہ ایسے اندھے پن کے اکثر کیسز میں بینائی کی واپسی ناممکن ہوتی ہے۔

یہ بھی پڑھیں : تمباکو نوشی چھوڑنے کے 12مددگار طریقے

انہوں نے کہا کہ لوگ یہ تو جانتے ہیں کہ اس عادت کے نتجے میں امراض قلب اور کینسر کا خطرہ ہوتا ہے مگر بینائی سے محروم اور آنکھوں کے دیگر مسائل کے بارے میں نہیں جانتے۔

صرف بھارت میں ہی بینائی سے محرومی کے سالانہ کیسز میں پانچ فیصد تمباکو نوشی کے استعمال کا نتیجہ ہوتے ہیں۔

تحقیق میں بتایا گیا کہ ذیابیطس کے شکار افراد کی بینائی پر اس عادت کے بدترین اثرات مرتب ہوسکتے ہیں اور اس سے بچنے کا واحد ذریعہ اسے ترک کرنا ہے۔